کئی بادشاہوں کے معاصر معمرسعودی کا انتقال

مصلح البقمی شاہ عبدالعزیز آل سعود کی مجالس میں شرکت کرتے تھے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب میں گذشتہ روز آل سعود خاندان کے تمام بادشاہوں کا معاصر ایک معمر شہری انتقال کر گیا۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مصلح بن منجی البقلمی کی عمر 130 سال تھی۔ اس نے زندگی میں مملکت میں آل سعود خاندان کی حکومت کے قیام کے بعد سے آج تک کئی حکمرانوں کو آتے جاتے دیکھا۔

سعودی مملکت کے بانی شاہ عبدالعزیز آل سعود کے ساتھ اس کے دوستانہ مراسم تھے اور وہ اکثر و بیشتر ان کی مجالس میں بھی شرکت کرتا تھا۔ وہ اپنی نجی محفلوں میں بتاتا کہ شاہ عبدالعزیز آل سعود مرحوم کس طرح سعودی عرب میں آئے اور آل سعود خاندان کی حکومت کی بنیاد رکھی تھی۔ انہوں نے شاہ عبدالعزیز کے بعد سے لے کر موجودہ فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود کا دور بھی دیکھا۔

معمر سعودی شہری مصلح بن منجی البقمی کا تعلق المزاحمیہ گورنری سے ہے۔ انہوں نے اپنا بچپن اور ابتدائی تعلیم اپنے شہر ہی سے حاصل کی۔ بڑا ہونے کے بعد انہوں نے مختلف قبائل کے درمیان ہونے والے تنازعات کو فرو کرانے میں ان کی مدد کی۔ قبائل اکثر انہیں اپنا ثالث مقرر کرتے اور ان کے فیصلوں کا احترام کیا جاتا۔

سالم البقمی کا کہنا ہے کہ اس کے والد بھی ایک سو تیس سال کی عمر کو پہنچ کر دنیا سے رخصت ہوئے۔ ان کے شناختی کارڈ پر درج عمر ان کی اصل عمر سے کم ہے۔ انہوں نے اپنی اس لمبی عمر میں کئی نشیب و فراز دیکھے۔

وہ اپنے والد کے بیان کردہ واقعات بھی لوگوں کو سناتے رہتے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ ان کے والد کا جبل خضن سے تعلق رکھنے والے ایک شخص سے ایک کنویں پر کوئی تنازع ہوا۔ ہم معاملے کے حل کے لیے شاہ فیصل کے پاس گئے۔ شاہ فیصل اس وقت ولی عہد تھے۔ انہوں نے طائف کے گورنر کے پاس معاملہ بھجوا دیا تاہم فیصلہ مخالف شخص نے اپنے والد کے حق میں کروا لیا۔

الشیخ البقمی حُسین یادوں کا ذخیرہ تھے۔ وہ اپنے دوستوں اور بچوں کو بتاتے کہ سعودی عرب میں آل سعود خاندان کی حکومت کا آغاز کیسے ہوا۔ پیرانہ سالی کے باوجود ان کی صحت اور یادداشت بہت اچھی تھی۔ عمر کتنی ہی لمبی کیوں نہ ہو آخر ہر شخص کو کوچ کرنا ہے۔ چنانچہ الشیخ البقمی بھی ایک سو تیس سال کی عمر پانے کے بعد جدا ہو گئے۔ ریاض کے گورنر شہزادہ فیصل بن بندر نے البقمی خاندان کو تعزیت کا پیغام بھیجا جس میں مصلح البقمی کے انتقال پر افسوس کا اظہار کیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں