.

تعز میں اتحادی طیاروں کی بمباری میں 11 حوثی ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے وسطی شہر تعز میں اتحادی ممالک کے جنگی طیاروں کی بمباری کے نتیجے میں کم سے کم 11 حوثی شدت پسند ہلاک اور 16 زخمی ہو گئے ہیں۔ بمباری سے باغیوں کے متعدد ٹھکانے تباہ کر دیے گئے ہیں، جس کے نتیجے میں شدت پسندوں اپنے ٹھکانے بدلنے پر مجبور ہو گئے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سوموار کو اتحادی طیاروں ںے تعز کے مغربی علاقے حبیل سلمان میں تبہ الخوعہ، شمال میں جبل الوعش شہر اور مغرب میں الحواص کے مقام پر باغیوں کے ٹھکانوں پر بمباری کی گئی۔

اتحادی طیاروں کی جانب سے یہ بمباری سومواراور منگل کی درمیانی شب فریقین میں طے پانے والی عارضی جنگ بندی سے چند گھنٹے قبل کیےگئے۔ یمن کے حالیہ بحران کے سیاسی حل کے لیے فریقین نے عارضی جنگ بندی پر اتفاق کیا ہے۔ بات چیت کے لیے جلد ہی سوئٹرزلینڈ میں یمن کے بحران کے حل کے سلسلے میں مذاکرات ہوں گے۔

قبل ازیں اپوزیشن سے مذاکرات کے لیے مختص ایک حکومتی عہدیدار معین عبدالملک نے بتایا کی جنگ بندی سوموار اور منگل کی درمیانی شب رات بارہ بجے سے نافذ العمل ہو گی۔ یمنی صدر عبد ربہ منصور ھادی کے مقرب ذرائع نے بھی گذشتہ شب سے جنگ بندی کے نافذ العمل ہونے کی تصدیق کی ہے۔