.

سعودی عرب سے لاکھوں لیٹر ڈیزل کی اسمگلنگ ناکام

سمگل کئے جانے والے تیل کی مبینہ منزل چین اور بھارت تھی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی حکام نے مملکت سے ڈیزل کی بھاری مقدار بیرون ملک اسمگل کرنے کی کوشش ناکام بناتے ہوئے تیل کے سیکڑوں ٹینکر قبضے میں لے لیے ہیں۔

سعودی خبر رساں ایجنسی’’ایس پی اے‘‘ نے وزارت پٹرولیم اور قدرتی وسائل کے حوالے سے بتایا ہے' کہ کسٹمز حکام نے مشرقی ریاض میں ایک کارروائی کے دوران 9 ملین لیٹر ڈیزل سے بھرے 450 ٹینکر قبضے میں لے لیے ہیں۔ ڈیزل سے بھرے یہ تمام ٹینکر مشرقی ریاض سے ساحلی شہر دمام میں شاہ عبدالعزیز بندرگاہ کی جانب روانہ کرنے کی تیاریاں کی جا رہی تھیں، جہاں سے انہیں بحری جہازوں پر لاد کر چین روانہ کیا جانا تھا۔

ریاض وزارت پٹرولیم کے بیان میں کہا گیا ہے کہ جدید ٹکنالوجی کی مدد سے پٹرولیم کی بیرون ملک ترسیل روکنے کے لئے جاری چیکنگ کے بعد یہ پہلی بڑی کارروائی ہے جس میں اتنی بھاری مقدار میں ڈیزل کی اسمگلنگ ناکام بنائی گئی ہے۔ گذشتہ کچھ دنوں سے وزارت پٹرولیم وقدرتی وسائل، جنرل کسٹمز اور تفتیش کاروں کے درمیان اعلیٰ سطحی تعاون کےنتیجے میں اسمگلنگ کی کارروائیوں میں غیرمعمولی کمی آئی ہے۔

سعودی عرب کے ذرائع کے مطابق سعودی عرب سے اسمگل کیے جانے والے ڈیزل کو ممکنہ طورپر بھارت اور چین لے جایا جانا تھا، تاہم وزارت پٹرولیم نے اس کی تصدیق یا تردید نہیں کی ہے۔