شام: فوجی بس بم دھماکے سے تباہ،10 افراد زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شام کے سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق دارالحکومت دمشق کی مغربی کالونی المزہ میں سڑک کے کنارے نصب بم پھٹنے سے ایک فوجی بس میں سوار کم سے کم دس افراد جن میں بیشتر فوجی بتائے جاتے ہیں شدید زخمی ہو گئے ہیں۔

شام کی سرکاری خبر رساں ایجنسی’’سانا‘‘ نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ دمشق پولیس المزہ کالونی میں ہونے والے ’’دہشت گردانہ‘‘ واقعے کی تحقیقات کر رہی ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ اتوار کے روز مسافروں کو لے جانے والی ایک فوجی بس سڑک کے کنارے نصب بم پھٹنے سے بری طرح متاثر ہوئی جس کے نتیجے میں بس میں سوار دس افراد زخمی ہوئے ہیں۔

شام کے سرکاری ٹی وی پر نشر کی گئی دھماکے کی فوٹیج میں کئی افراد کو لہولہان اسپتالوں میں لے جاتے دکھایا گیا ہے۔ ٹی وی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ بس میں کچھ فوجی اور بعض عام شہری سوار تھے۔ بم دھماکے سے زخمی ہونے والوں میں سے بعض کی حالت خطرے میں بیان کی جاتی ہے۔

عینی شاہدین نے ’’اے ایف پی‘‘ کو بتایا کہ سڑک کے کنارے نصب بم مقامی وقت کے مطابق شام پانچ بجے اس وقت دھماکے سے پھٹ گیا جب ایک ملٹری بس فوجیوں کو لے کر المزہ کالونی سے گذر رہی تھی۔ زخمیوں میں سے بعض کی حالت خطرے میں بیان کی جاتی ہے۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ دھماکے سے بس کے شیشے ٹوٹ گئے اور اس کی کھڑکیاں نیچے آ گریں۔ دھماکے سے کئی افراد زخمی ہوئے تھے جن کے خون سے بس کا فرش سرخ ہو گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں