جنرل جعفری اسدی شام میں ایران کا نیا سرغنہ

اسدی کی تقرری جنرل ہمدانی کے قتل کے بعد عمل میں لائی گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

شام میں صدر بشارالاسد کی حکومت کے دفاع کے لیے سرگرم ایرانی پاسداران انقلاب کے اہلکاروں اور نیم سرکاری ملیشیا کی کمان جنرل محمد جعفر اسدی کو سپرد کی گئی ہے۔ جنرل اسدی کی تعیناتی جنرل حسین ہمدانی کی جگہ عمل میں لائی گئی ہے جنہیں رواں سال اکتوبر میں شامی باغیوں نے شمالی شہر حلب میں گولیاں مار کر ہلاک کر دیا تھا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ایرانی رجیم کی مخالف تنظیم مجاھدین خلق کے نیوز ویب پورٹل ’’قومی مزاحمتی کونسل‘‘ نے تہران حکومت کے ایک ذمہ دار ذریعے کے حوالے سے بتایا ہے کہ سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای نے جنرل ہمدانی کی جگہ جنرل محمد جعفر اسدی کو شام میں سرگرم ملیشیا کا نیا سربراہ مقرر کیا ہے۔

رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ جنرل اسدی کی تقرری کے حوالے سے اطلاع پاسداران انقلاب کے ایک باوثوق ذریعے نے دی ہے تاہم سیکیورٹی کی وجوہات کی بناء پر ذرائع کی شناخت ظاہر نہیں کی گئی۔ ایران کے سرکاری میڈیا نے جنرل اسدی کی شام میں تعیناتی کی خبروں کی تصدیق یا تردید نہیں کی۔

رپورٹ میں جنرل جعفر اسدی کی پروفائل پر بھی مختصر روشنی ڈالی گئی ہے اور بتایا گیا ہے کہ انہوں نے سنہ 1980ء میں ایرانی فوج میں شمولیت اختیار کی۔ ان کا شمار ایرانی مسلح افواج کے چیف جنرل محمد علی جعفری کے مقرب عہدیداروں میں ہوتا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ایرانی فوج میں بھرتی ہونے سے قبل جنرل اسدی خلیج میں بھی کام کر چکے ہیں۔ شام میں سنہ 1979ء میں برپا ہونے والے ولایت فقیہ کے انقلاب سے چندے قبل وہ تہران واپس لوٹے جہاں انہوں نے صوبہ فارس میں پاسداران انقلاب کی بنیادیں رکھنے میں معاونت کی۔ اس کے علاوہ سنہ 1988ء میں عراق ایران جنگ میں بھی ان کا کلیدی کردار رہا۔آٹھ سالہ جنگ میں جنرل اسدی نے ’’المہدی‘‘ بریگیڈ کی کمان سنبھالے رکھی۔

سنہ 1999ء میں جنرل جعفر اسدی بری فوج کے سربراہ مقرر ہوئے اور دو سال تک اس عہدے پر تعینات رہے۔ بعد ازاں انہیں سنہ 2003ء سے 2007ء کے عرصے میں لبنان میں پاسداران انقلاب کا نگران مقرر کیا گیا۔ رواں سال 2015ء کے اوائل میں انہیں پاسداران انقلاب کے اقتصادی شعبے خاتم الانبیاء کے ہیڈ کواٹر میں انسپکٹر جنرل تعینات کیا گیا۔ شام میں جنرل حسین ھمدانی کی باغیوں کے ہاتھوں ہلاکت کے بعد جنرل اسدی کو ان کی جگہ شام میں پاسداران انقلاب اور نیم سرکاری ایرانی ملیشیا کا سربراہ مقرر کیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں