.

اسرائیلی جہازوں کی غزہ میں چار املاک پر بمباری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فلسطینی سیکیورٹی ذرائع کے مطابق اسرائیل کی فضائیہ نے ہفتے کے روز غزہ کی پٹی میں حماس کے مختلف ٹھکانوں پر بمباری کی۔ اطلاعات کے مطابق یہ حملہ جنوبی اسرائیل پر غزہ سے راکٹ حملوں کے کچھ گھنٹوں بعد کیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق اسرائیلی جنگی جہازوں نے بیت حانون اور رفح کے درمیان چار مختلف عمارتوں کو نشانہ بنایا ہے۔ حملے کے وقت عمارتوں کے خالی ہونے کی وجہ سے کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

اسرائیلی فوج نے ایک بیان میں بتایا ہے کہ اس کے جہازوں نے حماس کے دو فوجی ٹریننگ سنٹرز اور دو دیگر ٹھکانوں کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

بیان میں بتایا گیا ہے کہ "اسرائیلی فوج غزہ سے ہونے والے تمام حملوں کا ذمہ دار حماس کو گردانتی ہے۔"

اس سے پہلے جمعہ کی شام کو غزہ سے داغے جانے والے دو راکٹ جنوبی اسرائیل جا گرے۔ ان حملوں سے کسی جانی یا مالی نقصان کی اطلاع موصول نہیں ہوئی۔ اسرائیلی فوج کے اعداد وشمار کے مطابق غزہ اور اسرائیل کے درمیان ہونے والی 2014ء کی جنگ کے بعد سے تقریبا 30 میزائل غزہ سے اسرائیل کی جانب داغے جاچکے ہیں۔

عراق اور شام میں سرگرم دہشت گرد گروپ "داعش" سے وابستگی رکھنے کا دعویٰ کرنے والے جنگجوئوں نے اسرائیل پر ان حملوں کی ذمہ داری قبول کی ہے مگر اسرائیل غزہ کی حکمران جماعت حماس کو ہی ان تمام واقعات کی ذمہ دار گردانتا ہے۔