.

ایرانی فوج کا ایک اور جنرل بشارالاسد پر قربان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام کے شمالی شہر حلب میں صدر بشارالاسد کے وفادر فوجیوں کی عسکری رہ نمائی کے دوران ایک اور ایرانی جنرل کی ہلاکت کی اطلاعات آئی ہیں۔

ایرانی خبر رساں ایجنسی ‘‘فارس’’ کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ شمالی شام کے شورش زدہ شہر حلب میں شدت پسند تنظیم دولت اسلامی ‘‘داعش’’ کے حملے میں عسکری مشاورت کرنے والا ایک سینیر ایرانی فوجی افسر بریگیڈ جنرل محسن قاجاریان ہلاک ہو گیا ہیں۔ جنرل قاجاریان کی ہلاکت پر بری فوج کے سربراہ جنرل محمد باکبور نے افسوس کا اظہار کیا ہے۔

مقتول جنرل قاجاریان آرمرڈ فورسز کے بریگیڈ امام الرضا کے سربراہ تھے اور انہیں کچھ عرصہ پیشتر شام میں صدر بشارالاسد کی حمایت میں لڑنے والے فوجیوں کی عسکری رہ نمائی کے لیے بھیجا گیا تھا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق بریگیڈیئر جنرل قاجاریان کی ہلاکت کی اطلاع ایرانی وزارت انصاف کی آفیشل ویب سائیٹ پر بھی پوسٹ کی گئی ہے۔

خیال رہے کہ جنرل قاجاریان کی ہلاکت سے چند روز قبل حلب شہر میں ایرانی فوج کے چھ اہلکار ہلاک ہو گئے تھے۔ ہلاک ہونے والوں میں ایک شیعہ مذہبی مبلغ اور ایک سینیر فوجی افسر شامل تھا۔