.

شام کی سرزمین اور سیاسی فیصلہ گرفت میں ہے: ایران

اعلان قابض طاقت ہونے کا کھلا اعتراف ہے، مبصرین

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایرانی پاسداران انقلاب کے کمانڈر جنرل کے نائب جنرل حسین سلامی نے کہا ہے کہ " ایران نے اس بشار الاسد کی حکومت کے مفاد میں اس وقت شام کی سرزمین اور سیاسی فیصلے کو اپنی گرفت میں لے رکھا ہے"۔ مبصرین کے مطابق اس طرح کے بیان سے ایران یہ اعلان کر رہا ہے کہ وہ شام پر قابض طاقت ہے اور روزانہ کی بنیاد پر ہونے والی قتل وغارت گری کے علاوہ لاکھوں شامیوں کے بے گھر ہونے کا بھی ذمہ دار ہے۔

ایرانی نیوز ایجنسی "فارس" کے مطابق بدھ کے روز "باسیج" کی طلبہ تنظیم کے ذمہ داران کے اجلاس میں سلامی کا کہنا تھا کہ "ہم نے شام میں سیاسی اقتدار کے مفاد کی خاطر زمینی پیش رفت کی زمام کو مضبوطی سے تھاما ہوا ہے"۔

انہوں نے باور کرایا کہ " یہ ایران ہی ہے جس نے بڑی طاقتوں کی موجودگی کے باوجود شام میں بشار الاسد کو ٹھہرایا (مسلط کیا) ہوا ہے"۔

ایرانی پاسداران کے نائب کمانڈر جنرل کے مطابق " فلسطینی گروہ، حزب اللہ، عراق میں پاپولر موبیلائزیشن، شام میں نیشنل ڈیفنس فورسز اور یمن میں انصار اللہ (حوثی ملیشیا) یہ سب ایران کی تزویراتی گہرائی Strategic Depth)) کے نمائندے ہیں اور اس کے دشمن کے خلاف محاذوں کو چلا رہے ہیں"۔