.

سعودی عرب : افلاس اور دیوالیہ پن کے یومیہ 6 مقدمات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں رواں ہجری سال کے آغاز سے اب تک اِفلاس (دیوالیہ پن) کے تقریبا 1007 مقدمات سامنے آئے ہیں جن کی یومیہ اوسط 6 مقدمات ہے۔ وزارت عدل کی جانب سے جاری کردہ تازہ اعداد و شمار کے مطابق ریاض اور مکہ مکرمہ کے صوبے سر فہرست ہیں جہاں پر 554 مقدمات سامنے آئے جو کہ مجموعی مقدمات کا 55 فی صد ہے۔ اس کے بعد تیسرے نمبر پر مشرقی صوبہ رہا جہاں اسی عرصے میں 67 مقدمات درج ہوئے۔

مملکت کی عدالتوں میں گزشتہ چھ ماہ میں درج کیے جانے والے مقدمات کی تعداد میں گزشتہ برس اتنے ہی عرصے کے مقابلے میں 3 فی صد اضافہ ہوگیا۔

دوسری جانب وزارت انصاف نے عدالتوں کے تمام اہل کاروں کو پابند کر دیا ہے کہ وہ مقدمے کی سماعت کے ختم ہونے کے فوری بعد تمام عدالتی احکامات کو اسکین کرنے کے بعد عدالتوں کے الکٹرونک نظام میں محفوظ کریں۔

وزارت انصاف ان دنوں تمام دستاویزات کو الکٹرونک طریقے سے محفوظ کرنے پر کام کررہی ہے۔ اس سے پہلے جائداد کے اثاثوں کا ریکارڈ محفوظ کرنے سے متعلق منصوبے کا آغاز کیا گیا تھا۔ اس کا مقصد جائداد اور ریئل اسٹیٹ کے معاہدوں کو عدلیہ حکام کے پاس محفوظ کرنا ہے تاکہ وہ انہیں کھونے اور تلف ہونے سے بچایا جاسکے۔ اس طرح نسبتا تیزی کے ساتھ مطلوبہ معلومات تک رسائی ہوسکے گی اور املاک کی تلاش کا عمل بھی آسان بن جائے گا۔