.

عراق : مقتدیٰ الصدر کی نئی کابینہ کے لیے مظاہروں کی اپیل

عراقی پارلیمان سے نئی کابینہ کے حق میں ووٹ دینے کے مطالبے کا اعادہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے طاقتور شیعہ رہ نما مقتدیٰ الصدر نے نئی کابینہ کی منظوری کے لیے پارلیمان پر دباؤ ڈالنے کی غرض سے نئے مظاہروں کی اپیل کی ہے۔

عراقی پارلیمان شعلہ بیان مقتدیٰ الصدر کی پہلے سے دی گئی ڈیڈلائن کے مطابق وزیر اعظم حیدر العبادی کی مجوزہ ٹیکنوکریٹس پر مشتمل کابینہ کی منظوری دینے میں ناکام رہی ہے۔

انھوں نے بدھ کو جاری کردہ ایک بیان میں کہا ہے کہ سیاست دانوں اور بدعنوانیوں کے مُحبین پر دباؤ برقرار رکھنے کے لیے پُرامن مظاہرے اسی شدت کے ساتھ جاری رکھے جائیں۔انھوں نے خبردار کیا ہے کہ کسی کو بھی ان مظاہروں کو روکنے کا اختیار حاصل نہیں ہے۔دوسری صورت میں انقلاب نیا رُخ اختیار کرے گا۔

مقتدیٰ الصدر نے ایک مرتبہ پھر پارلیمان سے یہ مطالبہ کیا ہے کہ وہ نئی کابینہ کی منظوری دے۔انھوں نے پارلیمان میں اپنی جماعت کے ارکان کو ہدایت کی ہے کہ اگر کابینہ پر رائے شماری کے علاوہ کوئی اجلاس بلایا جاتا ہے تو وہ اس میں شرکت نہ کریں۔