.

شام میں انتقال اقتدار سے متعلق دستاویز کا اجراء

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام کے لیے اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی اسٹافن ڈی مستورا نے جنگ زدہ ملک میں انتقال اقتدار سے متعلق ایک دستاویز جاری کردی ہے۔ان کا کہنا ہے کہ شامی حزب اختلاف اور حکومت کے درمیان بعض ایشوز پر اختلافات کے باوجود اس بات میں اتفاق پایا جاتا ہے کہ عبوری نظم ونسق میں موجودہ حکومت ، حزب اختلاف ،آزاد دھڑوں کے نمائندے اور دوسرے شامل ہو سکتے ہیں۔

انھوں نے جنیوا میں دو ہفتے تک شامی حکومت اور حزب اختلاف کے درمیان مذاکرات کے بعد جمعرات کو یہ دستاویز جاری کی ہے۔البتہ ان کا کہنا ہے کہ شامی حکومت اور حزب اختلاف کے بڑے گروپ کے درمیان بعض مشترکہ باتوں کے باوجود سیاسی انتقال اقتدار کے حوالے سے ویژن میں اختلافات پائے جاتے ہیں۔

انھوں نے کہا ہے کہ بین الاقوامی شام سپورٹ گروپ میں شامل بڑی عالمی اور علاقائی طاقتوں کو بنیادی ایشوز کی وضاحت کے لیے مدد دینا ہوگی تاکہ مستقبل میں ہونے والے مذاکرات کے ادوار میں ایک قابل عمل سیاسی انتقال اقتدار کے لیے کسی سمجھوتے تک پہنچا جا سکے۔