شام: حکومت کی حماہ جیل میں آگ لگانے کی کوشش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

شام میں حماہ کی مرکزی جیل میں 6 روز قبل قیدیوں کی جانب سے نافرمانی کی تحریک کے آغاز کے بعد سے صورت حال انتہائی ابتر ہو چکی ہے۔ شامی حکومت نے جمعے کے روز جیل پر دھاوا بولنے کی بھی کوشش کی۔ سیکورٹی فورسز نے جیل کا محاصرہ کرنے کے بعد پٹرول بم کا استعمال کیا، جس کے نتیجے میں متعدد قیدیوں کے دم گھٹ گئے۔

واقعے سے متعلق العربیہ ڈاٹ نیٹ کو ملنے والی وڈیو کے مطابق سرکاری فورسز نے جمعہ کی شب جیل کے اندر آگ لگانے کی کوشش کی۔ اس کے علاوہ اوپری منزل کی کھڑکیوں کے ذریعے پتھراؤ اور ربر کی گولیاں مار کر مشتعل قیدیوں میں افراتفری پیدا کر دی۔

ایسے وقت میں جب کہ حماہ کی مرکزی جیل میں انسانی صورت حال بدترین سطح پر پہنچ چکی ہے اور لوگ بھوک سے بے حال ہیں، شامی حکومت نے قیدیوں کو آخری دھمکی کے طور پر دو اختیارات دیے کہ آیا وہ یرغمال بنائے گئے سرکاری اہل کاروں کو حوالے کر دیں اور یا پھر جیل پر مکمل دھاوے کے لیے تیار رہیں۔
قیدیوں کے مطالبات

جیل کے قیدیوں نے گزشتہ پیر کے روز سے حکومتی فورسز کے 4 اہل کاروں کو یرغمال بنا کر مطالبہ کیا تھا کہ انقلابی تحریک کے آغاز کے بعد سے گرفتار کیے جانے والے تقریبا 800 سیاسی قیدیوں کو رہا کیا جائے۔ مزید مطالبات میں جیل کے حالات کو بہتر بنانا، کسی بھی قیدی کو ملک کے شمال میں واقع صيدنايا جیل منتقل نہ کرنا اور مریض قیدیوں کے لیے دواؤں کے داخلے کی اجازت دینا شامل ہیں۔

ادھر شامی حکومت نے بھوکے رکھنے کی پالیسی کا سہارا لیتے ہوئے قیدیوں تک خوراک پہنچنے کے عمل کو روک دیا۔ ایک دوسری وڈیو میں قیدیوں کو سوکھی اور باسی روٹی کھاتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔ قیدیوں نے صلیب احمر اور اقوام متحدہ سے اپیل کی ہے کہ کسی بھی بڑے المیے کے وقوع سے قبل ان کی مدد کی جائے۔

یاد رہے کہ شامی حکومت نے جمعہ کے روز جیل پر چڑھائی کی کوشش کی تھی تاہم "العربيہ" کے ذرائع نے تصدیق کی تھی کہ یہ کوشش ناکام ہو گئی۔ دھاوے کی کوشش کے دوران حکومتی فورسز کی جانب سے براہ راست فائرنگ اور پٹرول بموں کے استعمال کے نتیجے میں متعدد قیدی زخمی ہو گئے۔

www.facebook.com/syrian.press.center/videos/1749736831935587/

www.facebook.com/syrian.press.center/videos/1749732398602697

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں