عراق: فضائی حملے میں داعش کا جنگی منصوبہ ساز ہلاک

تازہ لڑائی میں موصل میں 17 دہشت گرد ہلاک، پٹرول پمپ تباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عراق میں امریکا کی قیادت میں اتحادی فوج کے ایک فضائی حملے میں دولت اسلامی ’’داعش‘‘ کہلوانے والی شدت پسند تنظیم کا اہم کمانڈر اور تنظیم کا جنگی امور کا نگران ہلاک ہو گیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق نینویٰ آپریشنل کنٹرول روم کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ داعشی کمانڈر ابو طلحہ السوری کو مخمور گورنری کے العوسجہ قصبے میں اس وقت فضائی حملے کا نشانہ بنایا جب وہ اپنی گاڑی پر جا رہا تھا۔

بیان میں مزید بتایا گیا ہے کہ جنوبی موصل میں عالمی اتحادی فوج کےفضائی حملوں میں داعش کا ایک پٹرول اسٹیشن تباہ اور حالیہ چند ایام میں کم سے کم 17 داعشی دہشت گرد ہلاک ہوئے ہیں۔ بیان میں کہا گیاہے کہ تباہ ہونے والا پٹرول اسٹیشن تیل کی غیر قانونی اسمگلنگ اور داعش کے لیے استعمال ہو رہا تھا۔

ادھر ایک دوسرے بیان میں نینویٰ آپریشنل ملٹری کنٹرول روم کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ القیارہ کے مقام پر فضائی حملے میں ایک ٹرک کو تباہ کردیا گیا۔ اس ٹرک پر بارود سے بھری دو کاریں لوڈ کی گئی تھی اور اسے مبینہ طور پر بم دھماکوں کے لیے کسی دوسرے مقام پر لے جایا جا رہا تھا۔ اسی علاقے میں فضائی حملوں میں داعش کے اسلحہ ڈپو اور فوجی مقاصد کے لیے استعمال ہونے والے سامان کو تباہ کیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں