عراق : بعقوبہ میں خودکش بم دھماکا ، 13 ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عراق کے دارالحکومت بغداد کے شمال مشرق میں واقع شہر بعقوبہ میں خودکش بم دھماکے کے نتیجے میں تیرہ افراد ہلاک اور کم سے کم ساٹھ زخمی ہوگئے ہیں۔

پولیس حکام کے مطابق خودکش بمبار نے سوموار کی شب صوبہ دیالا کے دارالحکومت بعقوبہ میں ایک بیکری اور ریستوراں کے نزدیک اپنی بارود سے بھری گاڑی کو دھماکے سے اڑایا ہے۔یہ شیعہ اکثریتی شہر بغداد سے ساٹھ کلومیٹر شمال مشرق میں واقع ہے۔

فوری طور پر کسی گروپ نے اس خودکش بم دھماکے کی ذمے داری قبول نہیں کی ہے لیکن ماضی میں سخت گیر جنگجو گروپ داعش کے بمبار صوبے دیالا کے شہروں میں اس طرح کے خودکش بم حملے کرتے رہے ہیں۔داعش کا اس وقت عراق کے سنی اکثریتی شمالی اور شمال مغربی علاقوں پر قبضہ ہے۔

واضح رہے کہ عراقی فورسز نے جنوری 2015ء میں صوبے دیالا کو داعش سے آزاد قرار دیا تھا لیکن اس کے بعد سے اس صوبے میں جہادیوں کے حملے ختم نہیں ہوئے ہیں اور وہ وقفے وقفے سے اپنے اہداف کو نشانہ بناتے رہتے ہیں۔

عراقی فورسز اور ان کی اتحادی ملیشیائیں مغربی صوبے الانبار میں الرمادی ،ہیت اور دوسرے قصبوں اور شہروں کو واگزار کرانے کے بعد اب شمالی شہر موصل میں داعش کے خلاف ایک بڑی کارروائی کی تیاری کررہی ہیں۔داعش الانبار میں اپنی شکست اور پسپائی کا بدلہ چکانے کے لیے اب گاہے گاہے عراقیوں پر خودکش بم حملے کررہے ہیں۔

تاہم اس وقت عراق میں داعش کی پیش قدمی رُک چکی ہے کیونکہ عراقی فورسز ایک جانب ان کے خلاف زمینی کارروائی کررہی ہیں اور دوسری جانب امریکا کی قیادت میں اتحاد کے لڑاکا طیارے ان پر فضائی حملے کررہے ہیں۔اس فضائی بمباری کے نتیجے میں ان کی آزادانہ نقل وحرکت محدود ہوچکی ہے اور وہ اپنے زیر قبضہ علاقوں پر کنٹرول برقرار رکھنے کے لیے کوشاں ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں

  • مطالعہ موڈ چلائیں
    100% Font Size