النصرہ محاذ شمالی شام میں ہمارا قلع قمع چاہتا ہے : جیش الاسلام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

شام میں اپوزیشن کی مذاکراتی سپریم کمیٹی کے سینئر مذاکرات کار اور جیش الاسلام تنظیم کے نمائندے محمد علوش نے انکشاف کیا ہے کہ الغوطہ کے علاقوں میں شام حکومتی فورسز کی پیش قدمی اور متعدد دیہاتوں اور قصبوں پر اس کا کنٹرول، اگلے محاذوں سے فیلق الرحمن تنظیم کے مکمل انخلاء کے بعد عمل میں آیا ہے۔

"الحدث" نیوز چینل کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے علوش نے باور کرایا کہ "النصرہ محاذ" تنظیم فیلق الرحمن کے تعاون سے دمشق کے اطراف وسیع علاقوں میں معرکوں کے ذریعے جیش الاسلام کا قلع قمع چاہتی ہے۔ بالکل اسی طرح جیسا کہ اس نے شام کے شمال میں جیش حُر (تقریبا 13 گروپ) کے متعدد گروپوں کے ساتھ کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ النصرہ محاذ اور فیلق الرحمن، مذاکرات میں شرکت کے پس منظر میں جیش الاسلام پر غداری کا الزام لگا کر اس کے خاتمے کی کوشش کر رہی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں