داعش نے 25 عراقیوں کو "تیزاب" میں ڈبو دیا !

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

دنیا بھر میں اپنے ظلم و بربریت کے سبب معروف دہشت گرد تنظیم داعش نے قتل کا کوئی طریقہ آزمائے بغیر نہیں چھوڑا ہے۔ اپنی تازہ ترین مجرمانہ جدت میں تنظیم نے موصل شہر میں 25 عراقی قیدیوں کو نائٹرک ایسڈ (تیزاب) سے بھرے حوض میں ڈبو کر موت کے گھاٹ اتار دیا۔

میڈیا رپورٹوں میں بتایا گیا ہے کہ ان افراد پر عراقی حکومت کے لیے جاسوسی کا الزام تھا۔

تفصیلات کے مطابق داعش کے ارکان نے ہر شخص کو رسی سے باندھ کر اسے نائٹرک ایسڈ سے بھرے حوض میں اتارا یہاں تک کہ اس کے تمام اعضاء پگھل گئے۔

ذرائع کے مطابق تنظیم نے یہ سفاکانہ کارروائی شہریوں کی آنکھوں سامنے کی تاکہ لوگوں کو اس سے عبرت حاصل ہو۔

یاد رہے کہ اس نوعیت کے تیزاب کو انسانی جسم کو گلا دینے والا شمار کیا جاتا ہے اور یہ عام طور پر کھاد اور دھماکا خیز مواد تیار کرنے میں استعمال کیا جاتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں