.

یمن: المکلا میں جھڑپیں، القاعدہ کے 13 ارکان ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں اتوار کے روز سیکورٹی ذرائع نے بتایا ہے کہ ملک کے جنوب مشرقی حصے میں شدید جھڑپوں کے دوران القاعدہ کے 13 جنگجو مارے گئے جب کہ یمنی فوج کے 3 اہل کار جاں بحق ہوئے۔

ذرائع کے مطابق جھڑپوں کا آغاز ہفتے اور اتوار کی درمیانی شب اس وقت ہوا جب سرکاری فوج نے حضرموت صوبے کے صدرمقام المکلا شہر کے مشرق میں شدت پسندوں کے زیراستعمال دو گھروں پو چھاپہ مارنے کی کوشش کی۔ واضح رہے کہ سرکاری فوج نے گزشتہ ماہ عرب اتحادی افواج کی سپورٹ کے ساتھ المکلا شہر کا کنٹرول واپس لے لیا۔ اس سے قبل اپریل 2015 میں القاعدہ تنظیم نے شہر پر قبضہ کرلیا تھا۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ جھڑپوں میں القاعدہ کے 13 جنگجو مارے گئے جب کہ سرکاری فوج کے تین اہل کار جاں بحق اور نو زخمی ہوئے۔

امریکا، یمن میں القاعدہ تنظیم کو دنیا بھر میں اس شدت پسند تنظیم کی سب سے خطرناک شاک شمار کرتا ہے۔ اسی وجہ سے امریکا کی جانب سے کئی سالوں سے ڈرون حملوں کے ذریعے یمن میں القاعدہ کی قیادت اور عناصر کو نشانہ بنایا جا رہا ہے۔