طیارے کے حادثے میں تمام امکانات زیر غور ہیں:صدر السیسی

تباہ شدہ طیارے کے بلیک باکسز کی تلاش کے لیے آبدوز جائے حادثہ کی جانب روانہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

مصر نے بحر متوسط میں تباہ شدہ مسافر طیارے کی تلاش کے لیے ایک آبدوز بھیجی ہے جبکہ صدر عبدالفتاح السیسی نے خبردار کیا ہے کہ حادثے کی تحقیقات میں وقت لگ سکتا ہے اور تمام منظرنامے زیر غور ہیں۔

انھوں نے اتوار کو ساحلی شہر دمیاطہ میں کھاد کے ایک پلانٹ کے افتتاح کے موقع پر کہا کہ حادثے میں تمام امکانات پر غور کیا جارہا ہے اور فوری طور پر کسی نتیجے پر پہنچنا قبل از وقت ہوگا۔

انھوں نے بتایا کہ وزارت تیل سے مسافر طیارے کے ملبے کی تلاش کے لیے آلات بھیج دیے گئے ہیں۔ان میں ایک آبدوز بھی شامل ہے جو سمندر میں تین ہزار میٹر گہرائی تک جا سکتی ہے۔

گذشتہ جمعرات کو علی الصباح مسافر طیارے کے حادثے کے بعد مصری صدر کا یہ پہلا سرکاری بیان ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ہم بلیک باکسز کی تلاش کے لیے سخت کوشش کررہے ہیں۔

مصری بحریہ نے قبل ازیں ساحلی شہر اسکندریہ سے شمال میں بحر متوسط میں انسانی باقیات ،ملبہ اور مسافروں کا سامان تیرتا ہوا ملنے کی اطلاع دی تھی لیکن وہ ابھی تک طیارے کے دونوں بلیک باکس ریکارڈرز کی تلاش میں ہے اور ان کی ملنے کی صورت میں حادثے کی اصل وجوہ کا پتا چل سکے گا۔

فرانسیسی تحقیقات کاروں نے ہفتے کے روز کہا تھا کہ مسافر طیارے نے راڈار سے غائب ہونے سے قبل انتباہی اشارے بھیجے تھے اور بورڈ میں دھواں پھیلنے کا پتا چلا تھا۔اس سے دھویں یا آگ کی وجوہ کا تو پتا نہیں چل سکا تھا۔البتہ اس سے یہ ضرور اندازہ ہو گیا تھا کہ حادثے سے قبل طیارے میں کیا ہوا تھا۔

صدر عبدالفتاح السیسی نے اس دھویں کی اطلاع مںظر عام پر آنے کے بعد کہا ہے کہ ''اب تک تمام ممکنہ منظرنامے زیر ہیں۔اس لیے یہ ضروری ہے کہ ہم کسی ایک خاص منظرنامے کی بات نہ کریں۔تحقیقات میں وقت لگے گا لیکن کوئی ان چیزوں کو چھپا نہیں سکتا ہے۔جونہی تحقیقات کے نتائج سامنے آئیں گے،لوگوں کو آگاہ کردیا جائے گا''

مصر للطیران کی پرواز 804 جمعرات کی صبح پیرس سے قاہرہ آتے ہوئے بحر متوسط میں گر کر تباہ ہوگئی تھی۔اس میں سوار تمام 56 مسافر اور عملے کے 10 ارکان ہلاک ہوگئے تھے۔یہ مسافر طیارہ( ائیربس 320 اے) یونانی جزیرے کریٹ اور مصر کی ساحلی پٹی کے درمیان پرواز کے دوران راڈار سے اچانک غائب ہوگیا تھا۔مصری فوج نے جمعہ کو اس لاپتا مسافر طیارے کا ملبہ ساحلی شہر اسکندریہ سے 290 کلومیٹر شمال میں بحر متوسط سے ملنے کی اطلاع دی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں