نامعلوم لڑاکا جیٹ کا احرارالشام کے مرکزی کیمپ پر حملہ

روس کی ادلب شہر پر بمباری کی تردید، حملوں میں 23 افراد ہلاک ،متعدد زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شام کے شمال مغربی صوبے ادلب میں نامعلوم لڑاکا طیاروں نے طاقتور باغی گروپ احرارالشام کے ایک مرکزی کیمپ پر بمباری کی ہے جس کے نتیجے میں متعدد افراد ہلاک اور زخمی ہوگئے ہیں۔

برطانیہ میں قائم شامی رصدگاہ برائے انسانی حقوق نے بتایا ہے کہ لڑاکا جیٹ نے ادلب کے دیہی علاقے شیخ بہار میں واقع کیمپ پر حملہ کیا ہے۔اس کیمپ میں عام طور پر اس تنظیم کے ٹرینر اور لیڈر موجود ہوتے ہیں۔

شامی فوج کے لڑاکا طیاروں نے گذشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران صوبہ ادلب میں متعدد فضائی حملے کیے ہیں۔اس صوبے کے دارالحکومت ادلب اور دوسرے بیشتر علاقوں پر احرارالشام اور القاعدہ سے وابستہ النصرۃ محاذ کا گذشتہ ایک سال سے قبضہ ہے۔

درایں اثناء روس نے باغیوں کے زیر قبضہ شہر ادلب پر سوموار اور منگل کی درمیانی شب فضائی حملوں کی تردید کی ہے۔روسی وزارت دفاع کے ترجمان آئیگور کوناشیکوف نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ''روسی طیاروں نے کوئی جنگی مشن انجام دیا ہے اور نہ صوبہ ادلب میں کوئی فضائی حملے کیے ہیں''۔

قبل ازیں شامی رصد گاہ نے یہ اطلاع دی تھی کہ روسی لڑاکا طیاروں نے منگل کو علی الصباح ادلب شہر پر بمباری کی ہے جس کے نتیجے میں 23 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے ہیں۔روسی طیاروں کی اس شہر پر یہ شدید ترین بمباری تھی۔لڑاکا طیاروں نے ایک اسپتال کے نزدیک واقع علاقے اور ایک عوامی باغ کو نشانہ بنایا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں