محمد علی مسلمان کھلاڑیوں کے لیے نمونہ تھے: الازہر الشریف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

مصر کے بین الاقوامی سطح پر معروف علمی مرکز الازہر الشریف نے عالمی شہرت یافتہ سابق باکسر محمد علی کلے کی وفات پر گہرے دکھ اور تعزیت کا اظہار کیا ہے۔ محمد علی ہفتے کے روز امریکا میں 74 سال کی عمر میں انتقال کر گئے تھے۔

الازہر الشریف کی جانب سے جاری بیان میں باور کرایا گیا ہے کہ محمد علی نے "اسلامی اخلاق کے پابند ایک مسلمان کھلاڑی کا شاندار نمونہ" پیش کیا۔ بیان کے مطابق "مرحوم نے اپنی زندگی انسانیت کی فلاح و بہبود، غریبوں کا خیال رکھنے اور نسل پرستی کے خلاف جنگ کے لیے وقف کر رکھی تھی۔ انہوں نے ظلم و زیادتی کو یکسر مسترد کر دیا تھا۔ وہ نہ صرف کھیل کے میدان میں ایک ہیرو تھے بلکہ اپنی قوم کی نصرت اور اس کے مسائل حل کرنے کے حوالے سے بھی ہیرو کا درجہ رکھتے تھے۔ انہوں نے انصاف پر مبنی انسانیت سے متعلق معاملات کا بھرپور دفاع کیا"۔

الازہر کے بیان میں کہا گیا کہ " اللہ رب العزت سے دعا کی جاتی ہے کہ وہ مرحوم کو اپنی جنت میں دائمی سکونت عطا فرمائے اور ان کے گھر والوں اور متعلقین کو صبر عطا فرمائے"۔

مقبول خبریں اہم خبریں