.

خطے کی صورت حال پر بات چیت، سعودی وزیر دفاع امریکا روانہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی نائب ولی عہد اور وزیر دفاع شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز آل سعود پیر کے روز سرکاری کے دورے پر واشنگٹن روانہ ہو گئے جہاں وہ متعدد ذمہ داران کے ساتھ ملاقاتوں میں دونوں ملکوں کے درمیان خصوصی تعلقات کی مضبوطی اور باہمی دلچسپی کے حامل علاقائی معاملات پر تبادلہ خیال کریں گے۔ شہزادہ سلمان کو اس دورے کی دعوت امریکا نے دی تھی۔

سعودی عرب اور امریکا کے درمیان تعلقات کا آغاز 1931 میں اُس وقت ہوا جب سعودی عرب کے بانی شاہ عبدالعزیز آل سعود نے ایک امریکی کمپنی کو مملکت میں تیل تلاش کرنے کا اختیار دیا۔ اس کے بعد 1933 میں دونوں ملکوں کے درمیان تعاون کے ایک معاہدے پر دستخط کیے گئے۔ مذکورہ معاہدے کے بارہ برس بعد 14 فروری 1945ء کو شاہ عبدالعزیز آل سعود نے امریکی صدر فرینکلن روزویلٹ سے ملاقات میں دو طرفہ تعلقات کی مضبوطی کی بنیاد رکھ دی۔

اہم موڑ

یہ ملاقات سعودی امریکی تعلقات کو مختلف میدانوں میں تزویراتی اتحاد کے مرحلے میں بدلنے کے حوالے سے اہم موڑ ثابت ہوئی اور مملکت کو اپنے قومی مفادات کے پورا کرنے کے لیے امریکا سمیت دنیا کے دیگر ملکوں کے ساتھ تعاون کا بھرپور موقع میسر آیا۔

سعودی عرب اور امریکا کے درمیان سیکورٹی تعلقات اور دفاعی امور میں مضبوطی لانے کے لیے شہزادہ محمد بن سلمان نے وزیر دفاع کی ذمہ داری سنبھالنے کے بعد خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی طرف سے امریکا میں ذمہ داران کے ساتھ متعدد اجلاس اور ملاقاتیں منعقد کیں۔

سعودی نائب ولی عہد کی امریکی ذمہ داران کے ساتھ ملاقاتیں

سال 2015ء میں شہزادہ محمد بن سلمان سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن نایف کے زیر قیادت اُس وفد میں شامل ہو کر امریکا پہنچے جو خلیج تعاون کونسل ممالک کے قائدین کی امریکی صدر باراک اوباما کے ساتھ ملاقات میں شریک تھا۔

دورے میں شہزادہ محمد نے امریکی وزیر دفاع ایشٹن کارٹر سے بھی ملاقات کی۔ اسی سال شہزادہ محمد نے خلیج عرب میں امریکی طیارہ بردار بحری جہاز USS Theodore Roosevelt کا دورہ کیا اور جہاز کے آلات جنگ، اس کی حملہ آور اور دفاعی ذمہ داریوں کے علاوہ آبدوز شکن صلاحیتوں سے متعلق آگاہی حاصل کی۔

رواں سال کے آغاز کے بعد سے سعودی وزیر دفاع امریکی وزیر توانائی ، امریکی وسطی کمان کے کمانڈر اور امریکی مرکزی کمان کے کمانڈر سے ملاقات کرچکے ہیں۔ وہ امریکی کانگریس کے ایک وفد سے بھی مل چکے ہیں جس کی قیاست سینیٹر بنیامین کارڈن کررہے تھے۔

اس کے علاوہ انہوں نے امریکی وزارت خارجہ میں پبلک ڈپلومیسی کے امور کے سکریٹری رچرڈ اسٹنجل سے بھی ملاقات کی۔ 20 اپریل 2016 کو سعودی نائب ولی عہد اور امریکی وزیر خارجہ کے درمیان ریاض میں اہم ملاقات ہوئی۔

اسی روز شہزادہ محمد بن سلمان ریاض کے قصر درعیہ میں خلیج تعاون کونسل کے وزراء دفاع اور امریکی وزیر دفاع کے درمیان ایک اجلاس میں بھی شریک ہوئے۔