.

داعشی جنگجو نے اپنے بھائی کا سرقلم کردیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

انٹرنیٹ پر پوسٹ کردہ ایک تازہ فوٹیج میں ایک مبینہ داعشی جنگجو کو اپنے ہی بھائی کو گولیاں مار کر ہلاک کرتے دکھایا گیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق داعش کی جانب سے جاری کردہ فوٹیج میں ابو عبداللہ نامی ایک جنگجو کو اپنے بھائی کو بے رحمی کے ساتھ گولیاں مارتے دکھایا گیا ہے۔ فوٹیج کے ساتھ جاری کی گئی تفصیلات میں گیا ہے کہ ملزم کو ارتداد اور دشمن کے ساتھ ساز باز کے جرم میں موت کے گھاٹ اتارا گیا ہے۔

"ولایۃ الجزیرۃ" کی جانب سے جاری کردہ فوٹیج کے ایک حصے میں دو عراقی شہریوں کو عراقی فوج کے ساتھ تعاون کے جرم میں گولیاں مار کر ہلاک کرتے دکھایا گیا ہے۔ فوٹیج میں قتل سے قبل عراقی شہریوں کے اقبالی بیانات بھی نشر کیے گئے ہیں۔ فوٹیج کے اس حصے میں دو داعشی جنگجو داعش کے جنگی لباس میں ملبوس دو افراد کو لاتے دکھائی دیتے جنہیں بعد ازاں قتل کردیا گیا جاتا ہے۔

اسی ویڈیو کے دوسرے حصے میں ابو عبداللہ نامی ایک جنگجو عربی میں بات کرتے ہوئے کہتا ہے کہ سزائے موت کے نفاذ میں کسی اپنے پرائے کا فرق نہیں کرنا چاہیے۔ اس کے فوری بعد وہ ایک قیدی کو گولیاں مار کر ہلاک کردیتا ہے جس کے بارے میں کہا گیا ہے کہ وہ مبینہ طور پر ابو عبداللہ ہی کا بھائی ہے۔

یہ فوٹیج کسی دور دراز علاقے میں تیار کی گئی ہے۔ غالب امکان یہ ہے کہ اسے عراق کے شہر موصل میں بنایا گیا۔