عراق: بلد میں خودکش حملہ ، 35 ہلاک اور 60 زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

عراق کے دارالحکومت بغداد کے شمال میں واقع شہر بلد میں جمعرات کی رات ایک شیعہ مزار پر حملے میں کم از کم 35 افراد ہلاک اور 60 زخمی ہو گئے۔

بغداد آپریشنز کی کمان نے اپنے ایک بیان میں بتایا ہے کہ صلاح الدین صوبے کے ضلع بلد میں سید محمد ابن امام ہادی کے مزار کو مارٹر گولوں سے نشانہ بنایا گیا۔ اس کے بعد مسلح خودکش حملہ آوروں نے مزار پر دھاوا بول کر فائرنگ کر دی۔

بیان کے مطابق دو خودکش بمباروں نے مزار کے قریب ایک تجارتی منڈی میں خود کو دھماکے سے اڑا دیا جب کہ تیسرے خودکش بمبار کو ہلاک کر کے اس کی بارودی بیلٹ کو ناکارہ بنا دیا گیا۔

داعش تنظیم نے ٹیلی گرام پر جاری کیے گئے بیان میں حملے کی ذمہ داری قبول کر لی۔

مقتدی الصدر نے السلام بریگیڈز ملیشیا کو مذکورہ مزار کے گرد پھیل جانے کی ہدایت کی ہے جو دارالحکومت بغداد سے 93 کلومیٹر شمال میں واقع ہے۔

یہ حملہ عراقی دارالحکومت بغداد کے علاقے کرادہ میں ہونے والے قتل و غارت کے پانچ روز بعد ہوا ہے۔ خود کش دھماکے کے ذریعے داعش تنظیم کی اس وحشیانہ کارروائی میں تقریبا 300 افراد ہلاک اور 200 کے قریب زخمی ہو گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں