معتمرین کو ان کی اقامت گاہوں میں آب زم زم فراہم کرنے کا فیصلہ

زم زم کے حصول کیے لیے معتمرین کو قطار میں لگنے کی زحمت نہیں ہوگی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی حکومت نے حجاج کرام کی طرز پر عمرہ کے مناسک کی ادائی کے لیے آنے والے مسلمان معتمرین میں آب زم زم ان کی اقامت گاہوں تک پہنچانے کا فیصلہ کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی وزیربرائے امور حج وعمرہ ڈاکٹر محمد بنتن نے ایک بیان میں بتایا کہ حجاج کرام کی طرح معتمرین کرام کو آب زم زم کی فراہمی بھی حکومتی ذمہ داریوں میں شامل ہے۔ اس سلسلے میں ایک نیا پروگرام ترتیب دیا گیا ہے جس کے تحت معتمرین کو اب زم زم ان کی اقامت گاہوں تک پہنچایا جائے گا۔ اس طرح معتمرین اور انتظامیہ دونوں کو سہولت ہوگی۔ معتمرین کوآب زم زم کے حصول کے لیے قطاروں میں کھڑے ہونے کی زحمت نہیں ہوگی اور زم زم کی تقسیم کے مراکز پر رش بھی ختم ہوجائے گا۔

وزیر حج نے یہ بیان زم زم کی تقسیم کے مراکز کے دورے کے دوران دیا۔ انہوں نے آب زم زم کی تقسیم کو جدید خطوط پر استوار کرنے کے لیے ایک نئے آپریٹنگ سسٹم کے جلد فعال ہونے کا بھی یقین دلایا۔

وزیر حج ڈاکٹر بنتن نے کہا کہ جس طرح حجاج کرام کو آب زم زم ان کی اقامت گاہوں تک پہنچایا جاتا ہے، اس طرح اب آب زم زم معتمرین کی اقامت گاہوں تک پہنچایا جائے گا۔ انہوں نے آب زم زم کی تقسیم کے مراکز کے دوران حج کے حوالے سے کیے جانے والے انتظامات کا بھی جائزہ لیا۔ انہوں نے کہا کہ پوری دنیا سے حج اور عمرہ کے لیے سعودی عرب آنے والے مسلمان ہم سب کے مہمان ہیں اور ان کی خدمت ہمارے لیے باعث فخر ہے۔ حجاج و معتمرین کی خدمت میں کوئی کسراٹھا نہیں رکھی جائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں