.

سعودیہ: نابیناؤں کی مساجد تک رسائی کے لیے خصوصی ٹریک

البریدہ کی 40 مساجد اور نابینا افراد کے گھروں کے درمیان ٹریک کا منصوبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں نابینا افراد کی بہبود کے لیے سرگرم ایک مقامی فلاحی تنظیم نے القصیم گورنری کے البریدہ شہر میں رہنے والے نابینا افراد کی مساجد تک رسائی کا خصوصی ٹریک تیار کرنے کے منصوبے پر کا کام شروع کیا ہے۔ ابتدائی طورپر شہر کی 8 مساجد تک 14 نابیناؤں کی رسائی آسان بنانے کے لیے ٹریک تیار کرلیے گئے ہیں جب کہ اگلے دو ہفتوں کے دوران شہر کی 40 مساجد اور نابینا افراد کے گھروں کے درمیان خصوصی ٹریک تیار کیے جائیں گے۔

نابینا شہریوں کی فلاح بہبود کے لیے کام کرنے والی تنظیم کےایگزیکٹو ڈائریکٹر خالد المشیقح نے اخبار’مکہ‘ سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ سعودی عرب میں نابینا افراد کے لیے گھروں سے مساجد تک خصوصی راستہ تیار کرنے کا اپنی نوعیت کا پہلا منصوبہ ہے۔ اس منصوبے کے تحت البریدہ شہر میں رہنے والے نابینا شہریوں کی 40 مساجد تک رسائی آسان بنانے کے لیے خصوصی ٹریک بنائے جا رہے ہیں۔ منصوبے پرعمل درآمد کرتے ہوئے 8 مساجد کے لیے ٹریک تیار کرلیے گئے ہیں جن سے 14 نابینا نمازی مستفید ہوں گے۔

ایک سوال کے جواب میں المشیقح کا کہنا تھا کہ نابینا نمازی اپنے لیے بنائے گئے خصوصی راستوں پر لاٹھی کے سہارے چلتے ہوئے آسانی سے آ اور جا سکیں گے۔ خصوصی ٹریک کی تیاری کے لیے چند اہم معیارات مقرر کیے گئے ہیں۔ ان میں نابینا افراد کے گھروں کا مسجد کے قریب ہونا۔ گھر اور مسجد کے درمیان کوئی خطرناک چوراہوں کا نہ ہونا اور نابینا افراد کا ملکیتی گھر ہونا بنیادی شرائط ہیں۔ اگر ان میں سے کوئی ایک شرط پوری نہیں ہوتی تو وہاں پر ٹریک نہیں بنایا جائے گا۔