امریکا کے تیار کردہ طیاروں کو ایران جانے کی اجازت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکا نے جمعے کے روز اعلان کیا ہے کہ وہ غیرملکی فضائی کمپنیوں کو اس بات کی اجازت دے دے گا کہ وہ امریکا کے بنائے ہوئے طیاروں کو ایران لے جائیں۔ یہ اعلان ایسے وقت میں کیا گیا ہے جب ایران اقتصادی پابندیاں اٹھائے جانے کے بعد تجاری روابط کو دوبارہ قائم کرنے کی کوشش میں مصروف ہے۔

امریکی وزارت خزانہ کے زیرانتظام غیرملکی اثاثوں کی نگرانی کے دفتر کی جانب سے ایک لائسنس جاری کیا گیا ہے جس کے تحت امریکا کے تیار کردہ طیاروں کو ایران میں "عارضی قیام" کی اجازت ہوگی۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ لفتھینزا ، ترک فضائی کمپنی یا دیگر فضائی کمپنیاں جو باقاعدگی سے ایران جاتی ہیں وہ اس روٹ پر امریکا کے تیار کردہ طیاروں یا امریکی فاضل پرزہ جات استعمال کرنے والے طیاروں کو استعمال کرسکیں گی۔

ایران اور مغرب کے درمیان دستخط کیا جانے والا نیوکلیئر معاہدہ ، امریکی کمپنیوں کو ایران کو شہری طیاروں کی فروخت کی اجازت دیتا ہے۔ تاہم بوئنگ کمپنی اور ایران کے درمیان مجوزہ ڈیل نے امریکی کانگریس کے ارکان کو چراغ پا کردیا جو اس کو روکنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ جمعے کے روز جاری ہونے والی اجازت کا مجوزہ بوئنگ ڈیل پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔


مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں