اردن : انٹیلجنس بیورو پر حملے کے ملزم کو سزائے موت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اردن میں ریاستی امن کی عدالت نے البقعہ میں انٹیلجنس بیورو پر حملے کے مرکزی ملزم "محمود حسن مشارفہ" کو پھانسی کی سزا سنائی ہے۔ حملے میں اردن کی جنرل انٹیلجنس کے 5 اہل کار ہلاک ہوگئے تھے۔

جبکہ عدالت نے مقدمے کے دوسرے ملزم کو ایک سال قید کی سزا سنائی ہے۔

مذکورہ دہشت گرد حملہ یکم رمضان کو ہوا تھا جس میں اردن کی انٹیلجنس سے تعلق رکھنے والے 5 افراد اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے تھے۔ حملے کے مرکزی ملزم محمود حسن مشارفہ کی عمر 22 برس ہے۔ وہ اس سے پہلے 3 مرتبہ حراست میں لیا جا چکا ہے۔ اس کے علاوہ 2012 میں القاعدہ سے ہمدردی رکھنے والی تنظیم جیش الاسلام کے لیے بھرتی کے الزام میں وہ ایک سال جیل میں گزار چکا ہے۔


مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں