.

یمن: سرکاری فوج اور مزاحمت کاروں کی نہم میں پیش قدمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں عوامی مزاحمت کے ترجمان نے بتایا ہے کہ سرکاری فوج اور مزاحمت کار نہم کے محاذ پر " التبہ البیضاء" کے ٹیلے پر کنٹرول حاصل کرنے میں کامیاب ہو گئے ہیں۔ یہ پیش رفت دارالحکومت صنعاء کے مشرق میں واقع ڈسٹرکٹ نہم میں حوثی اور صالح ملیشیاؤں کے ساتھ گھمسان کی لڑائی کے بعد سامنے آئی۔ اس دواران ہزیمت سے دوچار ہونے والی ملیشیاؤں کے 8 ارکان ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے جب کہ سرکاری فوج اور مزاحمت کاروں کی صفوں میں ایک رکن جاں بحق ہوا اور دو زخمی ہو گئے۔

سرکاری فوج کی دارالحکومت صنعاء کے راستے میں آنے والے بقیہ علاقوں کو آزاد کرانے کے لیے پیش قدمی جاری ہے۔ الجوف صوبے میں سرکاری فوج نے خب و شعب کے ڈسٹرکٹ میں تزویرانی اہمیت کے حامل جبل الاجاشرہ کا کنٹرول واپس لینے کا اعلان کیا ہے۔

ادھر منگل کے روز ایک غار پر عرب اتحاد کے فضائی حملے میں حوثی ملیشیاؤں میں بھرتیوں کا ذمہ دار عمر قوہس اپنے 9 ساتھیوں سمیت مارا گیا۔ دوسری جانب حوثی اور معزول صالح کی ملیشیاؤں نے عدن اور تعز کو ملانے والے راستے پر ایک پُل کو دھماکے سے اڑا دیا۔