سعودی عرب اور امارات کے ساتھ تعلق "مستحکم اور متوازن "ہے : السیسی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصر کے صدر عبدالفتاح السیسی نے باور کرایا ہے کہ مصر اور خلیج میں اس کے برادر عرب ممالک کے درمیان روابط انتہائی گہرے ہیں۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے ساتھ تعلق "مستحکم اور متوازن" ہے۔

اتوار کے روز مصری اخبارات کے چیف ایڈیٹروں کے ساتھ ایک مشترکہ بات چیت میں السیسی کا کہنا تھا کہ مصر کی جانب سے شام ، یمن اور لیبیا میں تصفیوں تک پہنچنے کے لیے پورا زور لگایا جا رہا ہے۔

السیسی نے خلیجی ممالک کے ساتھ تعلقات کو نوعیت کو مکمل طور پر سراہا۔ انہوں نے واضح کیا کہ بیرونی دنیا کے ساتھ مصر کا تعلق چار بنیادی اصولوں پر قائم ہے۔ یہ اصول " شراکت، تواتر، کشادہ اور متوازن اسلوب اور مفادات اور احترام کا تبادلہ" ہیں۔

مصری صدر کے مطابق ان کے ملک کی پالیسی پر اعتماد میں روز بروز اضافہ ہو رہا ہے اور وقت کے گزرنے کے ساتھ مصر کے ساتھ تعاون کا دائرہ بھی وسیع ہوتا جا رہا ہے۔

یمن کے بحران کے حوالے سے السیسی کا کہنا ہے کہ " خطے کے کسی بھی ملک میں مصر کی بری افواج موجود نہیں۔ مصری بحریہ باب المندب میں ماہی گیری کی آزادی اور بحری جہازوں کے نہر سوئز تک پہنچنے کو یقینی بنا رہی ہے۔ اس کے علاوہ مصری فضائیہ کے ارکان سعودی عرب میں ہمارے برادران کے ساتھ کام کر رہے ہیں"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں