.

عراقی کے سُنّی "گوریلا جنگ" کے لیے منظّم ہوں : الظواہری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

القاعدہ تنظیم کے سربراہ ایمن الظواہری نے اپنی ایک نئی وڈیو میں عراق کے سنیوں پر زور دیا ہے کہ داعش تنظیم کے ہزیمت سے دوچار ہونے کی صورت میں وہ ایک طویل گوریلا جنگ کے لیے پھر سے خود کو منظم کریں۔

وڈیو پیغام میں الظواہری کا کہنا تھا کہ "عراق میں سنیوں پر لازم ہے کہ وہ صرف شہروں کے شیعہ صفوی فوج (عراقی فوج) کے ہاتھوں میں چلے جانے ہر ہار نہ مانیں.. بلکہ سنیوں کو چاہیے کہ وہ ایک طویل گوریلا جنگ کے لیے اپنی تنظیم نو کریں تاکہ اپنے علاقوں میں نئے صفوی صلیبی قبضے کو شکست دے دوچار کریں"۔

عراقی فوج کو داعش تنظیم کے خلاف لڑائی میں ایران اور امریکا کے زیرقیادت فوجی اتحاد کی سپورٹ حاصل ہے۔