اسرائیل میں اُترنے والے " لبنانی" طیارے کی حقیقت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سوشل میڈیا پر ایک تصویر زیر گردش ہے جس میں ایک مسافر طیارہ اسرائیل کے دارالحکومت تل ابیب کے ہوائی اڈے پر نظر آ رہا ہے جب کہ طیارے پر "WINGS OF LEBANON" کا لوگو تحریر ہے۔

سوشل میڈیا پر زیر گردش تصویر کی وضاحت کرتے ہوئے لبنانی کمپنی نے بتایا کہ وہ بعض ذرائع ابلاغ کی جانب سے اس خبر پر حیرانی کا شکار ہو گئی کہ ایک لبنانی طیارہ اسرائیل کے بن گوریون ہوائی اڈے پر اترا اور اس پر "WINGS OF LEBANON" کمپنی کا لوگو بھی موجود ہے۔

لبنان کی نیشنل نیوز ایجنسی کے مطابق "ونگز آف لبنان" کمپنی نے مذکورہ طیارہ دو ماہ سے ترکی کی کمپنی (تيلويتد) سے کرائے پر لے رکھا ہے۔ جمعرات کی صبح طیارے کو ترک کمپنی کی کوآرڈینیشن سے پانچ روزہ معمول کی مرمت اور دیکھ بھال کے لیے بیروت کے رفیق الحریری انٹرنیشنل ہوائی اڈے سے ترکی کے شہر انطالیہ بھیجا گیا۔

اس دوران طیارے پر لبنانی کمپنی کا لوگو باقی رہ گیا۔ ترکی میں مرمت کے کام کے بعد طیارے کو واپس بیروت آنا تھا تاکہ "ونگز آف لبنان" کمپنی کے تحت دوبارہ سے اپنی پروازوں کا آغاز کرے۔ تاہم لبنانی کمپنی اس امر پر حیران رہ گئی کہ طیارہ متعدد مسافروں کو انطالیہ (ترکی) سے لے کر بن گوریون ہوائی اڈے پر اترا جب کہ (ونگز آف لبنان) کمپنی کا لوگو اس پر موجود ہے-

"ونگز آف لبنان" کمپنی کی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ یہ معاملہ "دونوں کمپنیوں کے درمیان متفقہ اقدامات سے تجاوز اور دونوں کمپنیوں کے درمیان کام کے تعلق کے حوالے سے خطرناک ہے"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں