شام : "کُرد انجلینا جولی" داعش کے ہاتھوں ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ہفتے کے روز سوشل میڈیا پر اور شامی کارکنان کے درمیان ایک معروف ترین کرد خاتون جنگجو کے مارے جانے کی خبر گردش کرتی رہی جو گزشتہ جمعرات کو شام کے شہر جرابلس کے قریب جھڑپوں میں ہلاک ہوئی۔

مقتول خاتون جنگجو آسیہ رمضان کا تعلق الحسکہ شہر سے ہے۔ ہالی ووڈ کی مشہور اداکارہ سے مشابہت رکھنے کی وجہ سے سوشل میڈیا پر آسیہ کو "کرد انجلینا جولی" کا نام دیا گیا تھا۔ 1996 میں پیدا ہونے والی آسیہ نے سال 2014 کے اواخر میں شامی کرد عسکری یونٹوں میں شمولیت اختیار کی۔ اس نے داعش تنظیم کے خلاف متعدد معرکوں میں شرکت کی۔

آسیہ رمضان جرابلس شہر کے نواح میں جرابلس عسکری کونسل کے معاونت کے لیے موجود فورسز میں شامل تھی۔ اس دوران وہاں جھڑپوں کے دوران وہ دریائے ساجور کے قریب ہلاک ہوئی۔

توقع ہے کہ آسیہ کی تدفین سرکاری طور پر اس کے آبائی شہر الحسکہ میں آئندہ دو روز کے دوران ہو گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں