.

اسرائیلی فوجیوں نے چاقو گھونپنے والے فلسطینی کو گولی مار دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مقبوضہ مغربی کنارے کے شہر الخلیل میں اسرائیلی فوجیوں نے چاقو گھونپنے والے ایک فلسطینی کو گولی مار کر شہید کردیا ہے۔مقبوضہ فلسطینی علاقوں میں گذشتہ چوبیس گھنٹے میں تشدد کا یہ چوتھا واقعہ ہے۔

اسرائیلی فوج نے ہفتے کے روز ایک بیان میں کہا ہے کہ اس فلسطینی نے الخلیل کے علاقے تل رومیضہ میں معمول کے سکیورٹی چیک کے دوران چاقو نکال کر ایک فوجی پر حملہ کردیا تھا جس سے وہ زخمی ہوگیا ہے۔

بیان کے مطابق :''موقع پر موجود سکیورٹی فورسز نے فوری خطرے سے نمٹنے کے لیے اس فلسطینی کو گولی مار دی جس سے اس کی موت واقع ہوگئی ہے''۔

جمعہ کے روز الخلیل اور اس کے نواح میں دو فلسطینی حملہ آوروں نے اسرائیلیوں پر حملے کئے تھے اور ایک نے مقبوضہ مشرقی بیت المقدس میں حملہ کیا تھا۔اسرائیلی فوجیوں نے ان تینوں کو فائرنگ کرکے موت کی نیند سلا دیا تھا جمعرات کو الخلیل میں ایک فلسطینی نے گرفتاری سے بچنے کے لیے بھاگنے کی کوشش کی تھی۔اس دوران اسرائیلی فوجیوں نے اس کو گولی مار شہید کردیا تھا۔

واضح رہے کہ یکم اکتوبر 2015ء کے بعد اسرائیلی فورسز کی مقبوضہ بیت المقدس اور غرب اردن میں فلسطینیوں کے خلاف سفاکانہ کریک ڈاؤن کارروائیوں میں 228 فلسطینی شہید ہوچکے ہیں۔ان میں سے قریباً 150 کے بارے میں اسرائیلی فورسز نے دعویٰ کیا ہے کہ وہ مبینہ طور پر حملہ آور تھے۔

فلسطینیوں کے مبینہ چاقو حملوں ،فائرنگ یا اپنی گاڑیوں کو راہ گیروں پر چڑھانے کے واقعات میں 34 اسرائیلی ، دو امریکی ،ایک سوڈانی اور ایک ایریٹرین شہری ہلاک اور متعدد زخمی ہوئے ہیں۔اس دوران غزہ کی پٹی میں اسرائیلی فوج کے فضائی حملوں میں بھی متعدد فلسطینی شہید ہوچکے ہیں۔