.

سعودی عرب اور یمن کی سرحد پرگھمسان کی لڑائی

یمنی باغیوں کی دراندازی کی کوشش ناکام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن اور سعودی عرب کی سرحد پر یمنی باغیوں اور سعودی فورسز کے درمیان شدید لڑائی کی اطلاعات ہیں۔ العربیہ کو ملنے والی اطلاعات میں بتایا گیا ہے کہ الطوال گذرگاہ اور اس کے قرب وجوار میں یمنی باغیوں نے سعودی عرب میں دراندازی کی کوشش کی تھی جسے ناکام بنا دیا گیا ہے۔ سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحادی کے طیاروں اور توپخانے کی مدد سے یمن میں باغیوں کے کئی ٹھکانے اور میزائل لانچنگ اڈے تباہ کردیے گئے ہیں۔

ادھر شام کے تعز شہر سے اطلاعات ملی ہیں کہ علی صالح اور حوثی باغیوں نے الصلو ڈاریکٹوریٹ کے الصیار قصبے میں مقامی آبادی کو جبرا بے دخل کرنا شروع کردیا ہے۔ باغیوں کی طرف سے کالونی میں وحشیانہ کریک ڈاؤن کیا گیا اور ان کے گھروں کو فوجی بیرکوں اور اسلحہ کے مراکز میں تبدیل کردیا گیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق یمن اور سعودی عرب کےدرمیان الطوال کراسنگ کے قریب باغیوں اور سعودی بارڈر فورسز کے درمیان خون ریز جھڑپیں ہوئی ہیں۔ اتحادی ممالک کے طیاروں نے گذرگاہ کے قریب باغیوں کی ایک فوجی گاڑی کو نشانہ بنا کر تباہ کردیا۔ اس کے علاوہ سرحد کے قریب باغیوں کے توپخانے اور راکٹ فائر کرنے کے اڈوں پر بھی بمباری کی گئی ہے جس کے نتیجے میں باغیوں کے توپخانے اور میزائل اڈے تباہ کردیے گئے ہیں۔

الحرث کے مقام سے بھی یمنی باغیوں نے سعودی عرب میں داخل ہونے کی ناکام کوشش کی۔ سعودی فورسز نے دراندازی کی کوشش کرنے والے باغیوں کے خلاف بھرپور جوابی کارروائی کی جس کے نتیجے میں باغی فرار ہونے پرمجبور ہوگئے۔

ادھر یمن کے اندرونی شہروں میں حوثی باغیوں اور مںحرف سابق صدر علی صالح کے وفاداروں کی طرف سے نہتے شہریوں کو انتقامی کارروائیوں کا نشانہ بنائے جانے کا سلسلہ جاری ہے۔ تعز میں الصیار کالونی کے شہریوں کو ان کے گھروں سے نکال دیا گیا ہے اور شہریوں کے مکانات کو فوجی بیرکوں میں تبدیل کیا گیا ہے۔

جنوبی تعز میں حیفان ڈاریکٹوریٹ سے مزاحمتی مرکزاطلاعات نے بتایا ہے کہ باغیوں نے بندوق کی نوک پرالصیار کالونی کے باشندوں کو ان کے گھروں سے نکال باہر کیا ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ کئی افراد کو حراست میں لیا گیا اور ان کے گھروں کو فوجی اور اسلحہ کے مراکز بنا دیا گیا۔

مغرب تعز میں باغیوں نے حکومتی فورسز کے ٹھکانوں کی طرف پیش قدمی کی کوشش کی تھی مگر مزاحمتی ملیشیا اور سرکاری فوج نے باغیوں کا حملہ پسپا کردیا۔ باغیوں نے المنطرح حذران کے مقام پر بھاری اور درمیانے درجے کے ہتھیاروں سے حملہ کیا مگر ان کا حملہ ناکام بنا دیا گیا۔