غزہ کی سرحد کے ساتھ اسرائیلی علاقے میں زیر زمین دیوار کی تعمیر

حماس کی سرنگوں کا راستہ روکنے کے لیے چند مہینوں میں دیوار مکمل ہو جائے گی : اسرائیلی عہدے دار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیلی فوج کے ایک سینیر عہدے دار کا کہنا ہے کہ غزہ کی سرحد کے ساتھ ایک زیر زمین دیوار تعمیر کی جارہی ہے۔اس کا مقصد اسرائیلی علاقے کی جانب آنے والی حماس کی سرنگوں کا راستہ روکنا ہے۔یہ دیوار آیندہ چند مہینوں میں مکمل ہوجائے گی۔

اسرائیلی فوج کی جنوب کمان سے تعلق رکھنے والے اس کمانڈر کا کہنا ہے کہ غزہ کی پٹی کے ساتھ قریباً ساٹھ کلومیٹر طویل یہ دیوار تعمیر کی جارہی ہے۔یہ زمین کے اوپر اور زیر زمین گہرائی بنائی جارہی ہے۔

اس عہدے دار نے اپنی شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر کہا ہے کہ اس دیوار کی تعمیر کا مقصد حماس کے زیر زمین نیٹ ورک کو موت کے کنویں میں تبدیل کرنا ہے۔

واضح رہے کہ 2014ء کی جنگ کے دوران حماس کے جنگجو متعدد مواقع پر اپنے زیر زمین سرنگوں کے نیٹ ورک کے ذریعے اسرائیلی علاقے تک پہنچنے میں کامیاب ہو گئے تھے۔اس جنگ کے دوران اسرائیلی فوج نے بتیس سرنگوں کو تباہ کردیا تھا۔اسرائیلی عہدے دار کا کہنا ہے کہ فوج اب اس خطرے سے نمٹنے کے لیے بھرپور اقدامات کر رہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں