"ملیشیاؤں کو مسلح کر کے ایران علاقائی امن تاراج کر رہا ہے"

متحدہ عرب امارات کے وزیر خارجہ کا یو این جنرل اسمبلی سے خطاب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

متحدہ عرب امارات کے وزیر خارجہ الشیخ عبداللہ بن زاید نے اقوام متحدہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران نے گزشتہ برس عالمی طاقتوں کے ساتھ نیوکلیئر سمجھوتے کے بعد سے علاقائی امن تاراج کرنے کا کوئی موقع ہاتھ جانے نہیں دیا۔

یو این جنرل اسمبلی سے ہفتے کی شب اپنے خطاب میں الشیخ عبداللہ بن زاید کا کہنا تھا کہ "ایران اب بھی خطے کے ہمسایہ ملکوں میں مسلسل مداخلت کے ذریعے آزادی و خودمختاری کے اصولوں کی دھجیاں بکھیر رہا ہے۔ ایران کی ان کوششوں سے علاقے میں گھٹن اور مسلسل عدم استحکام کی فضا پائی جاتی ہے۔"

ان کا مزید کہنا تھا کہ "تہران اپنے شعلہ نوا بیانئے، کھلی مداخلت اور ملیشیاؤں کو مسلح کرنے جیسے اقدامات کے ذریعے علاقائی امن تاراج کر رہا ہے۔ نیز میزائل پروگرام کو ترقی جیسے اقدامات اٹھا کر ایران ساری صورتحال پر کو مزید خراب کر رہا ہے۔"

انہوں نے اپنی تقریر میں یاد دلایا کہ ایران کے حالیہ بیانات سے یہ بات روز روشن کی طرح عیاں ہو گئی ہے کہ وہ متعدد عرب ملکوں کی داخلی سیاست میں مداخلت سے باز نہیں آیا۔ ان میں یمن، لبنان اور شام نمایاں نام ہیں۔

ایرانی پاسداران انقلاب کے سابق کمانڈر محسن رضائی کا گزشتہ جمعہ کو دیا جانے والا بیان اس سلسلے کی تازہ ترین کڑی ہے جس میں انہوں نے واشگاف الفاظ میں کہا تھا کہ "ان کا ملک شام، بحرین اور یمن میں اپنے حلیفوں کو تنہا نہیں چھوڑے گا اور ان کی سیاسی اور معنوی امداد جاری رکھے گا۔"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں