شام سے متعلق واشنگٹن اور لندن کے بیانات "ناقابل قبول" : روس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

روس نے اتوار کے روز سلامتی کونسل کے ہنگامی اجلاس میں شام کے حوالے سے واشنگٹن اور لندن کے بیانات کی مذمت کرتے ہوئے انہیں " ناقابل قبول" قرار دیا ہے۔

پیر کے روز ماسکو میں صدارتی محل کرملن کی جانب سے جاری بیان میں اقوام متحدہ میں امریکی اور برطانوی مندوبین کے "خطاب اور لہجے" پر کڑی نکتہ چینی کی گئی ہے۔ مذکورہ مندوبین نے روسی فوج پر "بربریت" اور شام کے تنازع میں جنگی جرائم کے ارتکاب کا الزام عائد کیا تھا۔

کرملن کے ترجمان ديمتری بیسکوف کے مطابق "برطانیہ اور امریکا کے مندوبین کا عام لہجہ اور خطاب ناقابل قبول ہے اور یہ ہمارے تعلقات کو نقصان پہنچائیں گے"۔

واضح رہے کہ روسی فضائیہ کے طیارے شام کے شمالی شہر حلب میں اپوزیشن گروپوں کے زیرکنٹرول مشرقی حصوں کو شدید بم باری کا نشانہ بنا رہے ہیں۔

کرملن نے اس اندیشے اظہار کیا ہے کہ شامی اپوزیشن جنگ بندی سے فائدہ اٹھاتے ہوئے حملہ کر سکتی ہے۔ کرملین کے مطابق موجودہ مرحلے پر شام کے حوالے سے کسی سربراہ ملاقات کا انعقاد خارج از امکان ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں