.

داعش کا نیا قتل عام.. جیش حُر کے ارکان موت کے گھاٹ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

داعش تنظیم نے منگل کے روز خون ریز مناظر پر مشتمل ایک نئی وڈیو جاری کی ہے جس میں شام کی جیش حُر کے ارکان کے سر کاٹتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔ وڈیو میں دھمکی دی گئی ہے کہ امریکا کے زیرتربیت شام میں اپوزیشن جماعتوں سے وابستہ ہونے والے ہر فرد کو موت کے گھاٹ اتارا جائے گا۔

وڈیو کا دورانیہ 19 منٹ ہے اور اس کو داعش کے پیروکار گروپ "عراق میں ولایت ِ فرات" نے جاری کیا ہے۔ اس میں بتایا گیا ہے کہ جیش حُر کے مذکورہ عناصر کو عراق کی سرحد کے نزدیک شام کے شہر البوکمال میں داعش کے خلاف کارروائیوں کے دوران حراست میں لیا گیا۔

وڈیو میں داعش کے دہشت گرد تنظیم کے شام پر حکمرانی کے عزم کا ذکر کر رہے ہیں اور ساتھ ہی امریکا پر الزام بھی عائد کررہے ہیں کہ وہ مشرق وسطی پر قبضے کی کوشش کر رہا ہے۔

وڈیو کے آخر میں سیاہ کپڑوں میں ملبوس داعش کے دہشت گردوں نے شام کی جیش حُر کے ارکان کو جو نارنجی لباس پہنے ہوئے تھے.. ایک صحرائی علاقے میں زمین پر لٹایا اور پھر چھوٹے حجم کے چُھروں کے ساتھ ان کے سر تن سے جدا کر ڈالے۔

گزشتہ ماہ کے آخر میں داعش نے عراقی فوج کے اہل کاروں کے اجتماعی قتل کا ارتکاب کیا تھا۔

حالیہ عرصے میں داعش تنظیم کو عراق میں کئی محاذوں پر ہزیمت کا سامنا اٹھانا پڑا ہے۔ عراقی فوج نینوی صوبے کے مرکز موصل شہر کو تنظیم کے قبضے سے آزاد کرانے کے لیے ایک بڑے حملے کی تیاری کر رہی ہے۔