.

دمشق میں روسی سفارت خانے پر ’ہاون‘ راکٹوں سے حملہ

کارروائی امریکا نواز عناصر نے کی: روس کا الزام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روسی وزارت خارجہ نے اطلاع دی ہے کہ شام کے دارالحکومت دمشق میں روسی سفارت خانے پر ’ہاون‘ راکٹوں سے حملہ کیا گیا ہے تاہم اس حملے میں ہونےوالے جانی اور مالی نقصان کی تفصیلات سامنے نہیں آسکی ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق تین اکتوبر کو جاری ایک بیان میں روسی وزارت خارجہ نے بتایا کہ دمشق میں ماسکو کے سفارت خانے اور سفارتی عملے کو راکٹوں سے نشانہ بنایا گیا ہے۔ ایک ھاون راکٹ سفارت خانے کی عمارت کے قریب خالی زمین پرگر کر پھٹا تاہم اس دھماکے کے نتیجے میں سفارت خانے میں کسی قسم کا جانی نقصان نہیں ہوا ہے۔

وزارت خارجہ کے مطابق دمشق سے ملنے والی اطلاعات میں بتایا گیا ہے کہ سفارت خانے پر حملہ دمشق کے قریب جوبر کالونی پر بمباری کے بعد کیا گیا۔ اس کالونی پر فتح الشام محاذ ’جفش‘ اور فیلق الرحمان نامی جنگجوؤں کا قبضہ ہے۔

روسی وزارت خارجہ ان حملوں کو امریکا اور اس کی حامی قوتوں کی اقدامات کا نتیجہ قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ ماسکوکے سفارت خانے پر راکٹ حملے کرنےوالے شام کی جنگ کو مزید بھڑکانے کی کوشش کررہے ہیں۔