.

روسی طیارہ بردار جہاز نے بحیرہ روم میں شام کا رخ کر لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روسی وزارت دفاع کے مطابق روس کا طیارہ بردار بحری جہاز "ایڈمرل کوزنتسوف" روسی بحریہ کی استعداد بڑھانے کے لیے بحیرہ روم کی جانب روانہ ہو گیا ہے۔ اس بیڑے میں جنگی جہاز "پیٹر ویکلے" اور میزائل شکن جنگی جہاز "وائس ایڈمرل کولاکوف" کے علاوہ آبدوز شکن جہاز بھی شامل ہیں۔

وزارت دفاع نے مزید بتایا کہ ان بحری جہازوں کا مقصد جہاز رانی کو تحفظ فراہم کرنا اور کسی بھی قسم کے خطرے کا جواب دینا ہے جس میں قزاق اور بین الاقوامی دہشت گردی شامل ہیں۔

طیارہ بردار جہاز کا بھیجا جانا روسی وزیر دفاع سرگئی شویگو کے اس اعلان کے کچھ ہفتوں بعد سامنے آیا ہے جس میں انہوں نے کہا تھا کہ ماسکو بحیرہ روم میں روسی بحریہ کی استعداد بڑھانے کا ارادہ رکھتا ہے۔