.

جنگ بندی ختم، حلب میں بھاری ہتھیاروں سے دوبارہ لڑائی شروع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام میں روس اور شامی فوج کی طرف سے حلب میں محدود اوقات کے لیے کی گئی جنگ بندی ختم ہوتے ہی لڑائی دوبارہ شروع ہو گئی ہے۔

شام میں انسانی حقوق کی صورت حال پر نظر رکھنے والے ادارے’’شامی رصدگاہ برائے انسانی حقوق‘‘ کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ روس کی اعلان کردہ جنگ بندی کے خاتمے کے ساتھ ہی سرکاری فوج اور باغیوں کے درمیان شدید جنگ شروع ہو گئی ہے۔ دونوں طرف سے بھاری توپخانے سے ایک دوسرے پر حملے جاری ہیں۔

انسانی حقوق آبزرویٹری کا کہنا ہے کہ حلب کی متعدد کالونیوں توپخانے سے گولہ باری کی گئی ہے۔

خیال رہے کہ حلب شہر شامی فوج، اپوزیشن کی نمائندہ جیش الحر اور دوسرے باغیوں کے قبضے میں ہے۔ شہر کا مغربی حصہ اسدی فوج کے قبضے میں ہے جب کہ مشرقی حلب شامی اپوزیشن کے کنٹرول میں ہے۔ روس اور شامی فوج مل کر مشرقی حلب کو باغیوں سے چھڑانے کی کوشش کررہی ہیں۔