پاسداران انقلاب کی موصل میں شمولیت کے لیے سلیمانی عراق میں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ایرانی ذرائع ابلاغ کے مطابق ایرانی عسکری تنظیم "قدس فورس" کا کمانڈر میجر جنرل قاسم سلیمانی موصل کے معرکے میں شرکت کے لیے عراق پہنچ گیا ہے۔ سلیمانی وہاں ایرانی پاسداران انقلاب کی فورس اور تہران نواز فرقہ وارانہ ملیشیا پاپولر موبیلائزیشن کے دستوں کی نگرانی کرے گا۔

نیم سرکاری ایجنسی "مہر" کے مطابق سلیمانی اتوار کے روز اچانک عراق کے ریجن کردستان پہنچا تاکہ موصل کی لڑائی کے دوران عراقی اور کرد پیشمرگہ فورسز کو مشاورت پیش کرے۔

ایجنسی نے مزید بتایا کہ سلیمانی نے پیشمرگہ فورسز کے ہلاک ہونے والے جنگجوؤں کے اہل خانہ سے بھی ملاقات کی۔

مہر ایجنسی نے حسین منصور کے بیٹے کے ساتھ سلیمانی کی تصویر بھی نشر کی ہے۔ حسین منصور پیشمرگہ فورسز کا ایک اہم کمانڈر تھا جو 2015 میں داعش کے خلاف لڑائی میں ہلاک ہو گیا تھا۔

قاسم سلیمانی کردستان میں ذمے داران اور عسکری قیادت سے ملاقات میں انہیں موصل صوبے میں جاری معرکوں کی تفصیلات سے آگاہ کرے گا۔

واضح رہے کہ ایرانی "قدس فورس" کے کمانڈر قاسم سلیمانی ایسے وقت کردستان پہنچا ہے جب امریکی وزیر دفاع ایشٹن کارٹر بھی کرد ریجن کے دورے پر ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں