.

شام : ایرانی کمانڈوز کا بریگیڈ کمانڈر ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایرانی ویب سائٹوں نے ہفتے کے روز بتایا ہے کہ شام میں لڑنے والے ایرانی پاسداران انقلاب کے کمانڈو بریگیڈ کا کمانڈر بریگیڈیئر محمد علی محمد حسينی ہلاک ہوگیا ہے۔

ایرانی ویب سائٹ " تنویر" کے مطابق ایرانی صوبے فارس کے شہر کازرون میں پاسداران انقلاب کے کمانڈر نے اپنے ایک بیان میں بریگیڈیئر حسینی کے مارے جانے پر تعزیت کی ہے تاہم ہلاکت کی تاریخ اور مقام کے بارے میں کچھ نہیں بتایا گیا۔ نہیں بتایا۔

ایرانی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ پاسداران انقلاب میں کمانڈوز کے "سجاد" بریگیڈ کے کمانڈر بریگیڈیئر حسینی نے شمالی شام کے صوبے حلب میں دو قصبوں نبل اور زہراء کے معرکوں میں مرکزی کردار ادا کیا تھا۔

ماضی میں حسینی ایران کے شمال مغرب میں کرد اپوزیشن گروپوں کے خلاف پاسداران انقلاب کے آپریشنوں میں شریک رہا۔ علاوہ ازیں وہ عراق ایران جنگ میں بھی شرکت کر چکا ہے۔

بریگیڈیئر حسینی کے مارے جانے کی خبر بدھ کے روز ایرانی پاسداران انقلاب کے جنرل غلام رضا سمائی کی ہلاکت کے اعلان کے بعد آئی ہے۔ سمائی حلب میں شامی اپوزیشن کے خلاف بشار الاسد کی فوج کے شانہ بشانہ لڑتے ہوئے مارا گیا تھا۔

ایران حالیہ چند ماہ کے دوران شام میں اپنے درجنوں جنرلوں ، فوجی افسران اور ایلیٹ فورس کے بہت سے ارکان سے ہاتھ دھو چکا ہے۔

اعداد و شمار کے مطابق اپریل میں شام بھیجے جانے والے ایرانی اسپیشل فورسز کے یونٹوں کے ہلاک ارکان کی تعداد 7 افسران تک پہنچ چکی ہے۔ دوسری جانب گزشتہ برس ستمبر میں حلب میں لڑائی کے دوبارہ شروع ہونے کے بعد سے پاسداران انقلاب کے 450 سے زیادہ فوجی افسران اور اہل کار مارے گئے ہیں۔