.

فلسطینی لڑکے کو دو اسرائیلیوں پر چاقو حملے کی پاداش میں 12 سال قید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیل کی ایک عدالت نے ایک کم سن فلسطینی لڑکے کو دو اسرائیلیوں پر چاقو سے حملے کی پاداش میں بارہ سال قید کی سزا سنائی ہے۔

عدالت نے چودہ سالہ احمد مناصرہ کو مقبوضہ بیت المقدس کے نواح میں واقع یہودی بستی پیسگیٹ زیف میں بیس سال کی عمر کے ایک اسرائیلی نوجوان اور ایک بارہ سالہ لڑکے پر قاتلانہ حملے کے الزام میں قصور وار قرار دیا ہے۔

احمد نے مبینہ طور پر یہ حملہ اکتوبر 2015ء میں کیا تھا اور اس وقت اس کی عمر تیرہ سال تھی۔مقبوضہ فلسطینی علاقوں میں گذشتہ ایک سال سے جاری تشدد کے واقعات میں ان دونوں یہودیوں پر چاقو سے حملے کو ہائی پروفائل قراردیا گیا تھا۔