.

عراقی فوج موصل ہوائی اڈے پر حملے کے لیے تیار

تازہ لڑائی میں 30 داعشی جنگجو ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراقی فوج کے ایک سینیر افسر نے کہا ہے کہ فوج اور پولیس جنوبی موصل میں داعش کے زیرقبضہ ہوائی اڈے پرحملے کے لیے پیش قدمی کوتیار ہے۔

’العربیہ‘ کے مطابق عراقی فوج کے میڈیا وار سیل کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان مکں کہا گیا ہے کہ موصل کی مشرقی الانتصار کالونی میں فوج کی کارروائی میں داعش کا جنگی امور کا انچارج ہلاک ہوگیا۔ اس کے علاوہ فوج نے پیش قدمی کرتے ہوئے الزھراء کالونی کا کنٹرول بھی سنھبال لیا ہے۔

عراقی فورسز نینویٰ گورنری او اس کے مرکزی شہر موصل کو داعش سے چھڑانے کے لیے آپریشن کو مزید وسعت دے رہی ہے۔ عراق کے سیکیورٹی ذریعے کا کہنا ہے کہ شہر کے مشرقی حصے میں فوج نے پیش قدمی کرتےہوئے الزھراء کالونی پر قبضہ کرلیا ہے۔ عراقی فوج کے ایک سینیر عہدیدار جنرل عبدالوھاب الساعدی نے بتایا کہ الزھراء کالونی میں لڑائی کے دورن 30 داعشی دہشت گرد ہلاک ہوئے ہیں۔

سیکیورٹی ذریعے کے مطابق عراقی فوج نے داعشی جنگجوؤں کی ایک کمین گاہ پر حملہ کرکے متعدد جنگجوؤں کو قتل کرنے کے ساتھ ساتھ الشلالات کے مقام پر دو فوجی گاڑیاں اور اسلحہ وگولہ بارود تباہ کیا ہے۔

جنوبی موصل سے بھی عراقی فوج اور اس کے معاون قبائلی جنگجو نمرود قبیلے میں داخل ہوگئے ہیں۔ یہ شہر داعش کی بدترین دہشت گردی اور تباہی وبربادی کا شکار ہوچکا ہے۔ عراقی فوج کے آپریشنل کمانڈر جنرل عبدالامیر رشید یاراللہ نے عباس رجب قصبے پر عراقی پرچم لہرانے کا دعویٰ کیا ہے۔