.

سعودی عرب کے شمالی علاقے پر برف کی سفید چادر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے شمال میں برفانی طوفان کی آمد کے ساتھ ہی برف باری دیکھنے کے متوالوں کے درمیان مقابلہ شروع ہو گیا ہے۔ یہ مسلسل تیسرا سال ہے جب مخصوص ایام میں برف باری دیکھنے میں آ رہی ہے۔ اس موقع پر لوگوں کی ایک بڑی تعداد منفی درجہ حرارت میں برف باری سے لطف اندوز ہونے کے لیے شمالی صحرائی علاقے کا رخ کرتی ہے۔

منگل کے روز علاقے میں موجود لوگوں کی جانب سے رات کے پہر برف باری کے وڈیو کلپ جاری کیے گئے۔

اس سلسلے میں مملکت کے شمالی علاقے میں زمین کو برف کی چادر میں لپٹے ہوئے دیکھنے کے لیے آنے والے سعودی شہری ترکی الراجحی کا کہنا تھا کہ لوگ سردیوں کے آغاز سے ہی مملکت کے شمال اور شمال مغربی علاقوں میں موسم کی تازہ ترین تفصیلات حاصل کر رہے ہوتے ہیں تاکہ یہاں ہونے والی برف باری کی صورت حال کو جان سکیں۔

الراجحی کے مطابق رواں سال انہوں نے حزم الجلامید نامی گاؤں میں اپنا خیمہ نصب کیا ہے جب کہ ہر سال برف باری کا وقت بدلتا رہتا ہے جیسا کہ اس مرتبہ منگل کی شب 12 بجے کے بعد برف باری شروع ہوئی۔

حزم الجلامید

حزم الجلامید.. یہ سعودی عرب کی شمالی سرحد کے علاقے میں عرعر سے 100 کلومیٹر مشرق میں واقع ایک چھوٹا سا گاؤں ہے۔ عراق کی سرحد سے 60 کلومیٹر شمال میں واقع یہ گاؤں مملکت کے قدیم ترین دیہاتوں میں سے ہے۔ گاؤں میں بڑی مقدار میں فاسفیٹ دریافت ہونے کی وجہ سے یہاں ترقیاتی پیش رفت نہ ہوئی۔ دریافت کے بعد اس کی اراضی کو رہائش کے لیے تقسیم نہیں کیا گیا۔

موسم سرما میں مختلف اوقات میں حزم الجلامید میں برف باری ریکارڈ کی جاتی ہے جس کی تصدیق علاقے کا دورہ کرنے والے عوام بھی کرتے ہیں۔

علاقے میں موجود افراد نے اس ٹرین کی تصاویر بھی بنائیں جو حزم الجلامید سے فاسفیٹ کو خلیج عربی کے ساحل پر مملکت کے شہر راس الخیر منتقل کرتی ہے۔ یہ تصاویر صحراء اور خشکی کے سفر کے دیوانوں کے لیے سحر انگیز مناظر سے کم نہیں۔