.

"داعش" تنظیم نے استنبول حملے کی ذمے داری قبول کر لی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

داعش تنظیم نے ترکی کے شہر استنبول میں ہفتے اور اتوار کی درمیانی شب مشہور ریستوران پر ہونے والے حملے کی ذمے داری قبول کر لی ہے۔ ادھر ترک حکام نے حملہ آور کی تلاش کے سلسلے میں سکیورٹی اقدامات کو سخت کر دیا ہے۔

ترک وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ وہ فائرنگ کرنے والے شخص کو ڈھونڈنے کے لیے وسیع پیمانے پر تعاقب کر رہی ہے۔

سال نو کی رات ہونے والی اس تخریبی کارروائی میں مجموعی طور پر 39 افراد ہلاک ہوئے۔ ہلاک شدگان میں 7 سعودی اور 3 لبنانی شہریوں کے علاوہ اردن ، مراکش اور تیونس کے دو دو جب کہ کویت اور لیبیا کا ایک ایک شہری شامل ہے۔

ہفتے اور اتوار کی درمیانی شب ایک مسلح شخص نے مشہور ریستوران "رينا " میں اندھا دھند فائرنگ کر ڈالی۔

اس سے قبل استنبول کے میئر واصب شاہین نے مذکورہ حملے کو "دہشت گرد کارروائی" قرار دیا تھا۔ میئر کے مطابق حملہ آور کی تلاش جاری ہے اور خیال ہے کہ کارروائی میں اس کا ایک اور ساتھی بھی شریک تھا۔