کردستان نے سعودی قونصل خانہ سے متعلق ایرانی مطالبہ مسترد کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

عراق کے نیم خودمختار صوبہ کردستان کی حکومت نے ایرانی پاسداران انقلاب کی جانب سے اربیل میں سعودی قونصل خانہ بند کرنے سے متعلق مطالبہ ماننے سے انکار کر دیا ہے۔

کردستان حکومت کے پیر کے روز جاری کردہ بیان کے مطابق "اربیل میں قونصل خانے اور دیگر سفارتی دفاتر کی سرگرمیوں کو عراق اور صوبہ میں پہلے سے طے شدہ قوانین کی روشنی میں چلائے جاتے ہیں۔" سعودی پریس ایجنسی نے بیان کے حوالے سے مزید بتایا کہ "کسی کو یہ حق حاصل نہیں کہ وہ قونصل خانہ بند کرنے کا مطالبہ کرے۔"

یاد رہے کہ پاسداران ایران کی جانب سے کردستان کے معاملات سے متعلق یہ پہلا بیان نہیں۔ یہ بیان صوبہ کے داخلی معاملات میں صریح مداخلت ہے۔ بیان میں مزید کہا گیا کہ صوبہ ہمسایہ ملکوں سمیت دنیا بھر سے دوستانہ تعلقات قائم کرنے کا خواہش مند ہے۔ ہم اس بات کے متنمنی ہیں کہ ایران اپنے ایک سرکاری ادارے کی جانب سے غیر ذمہ دارانہ بیان پر اپنا نقطہ نظر واضح کرے اور آئندہ ایسی صورتحال پیدا ہونے سے روکنے کے لئے ضروری اقدامات اٹھائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں