غربِ اردن : اسرائیلی فوجیوں کی فائرنگ، فلسطینی نوجوان شہید ، پانچ زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

مقبوضہ مغربی کنارے کے شمال میں واقع جینن کیمپ میں اسرائیلی فوجیوں نے اتوار کے روز فائرنگ کرکے ایک فلسطینی کو شہید اور پانچ کو زخمی کردیا ہے۔

فلسطینی سکیورٹی ذرائع نے شہید ہونے والے نوجوان کی شناخت محمد ابو خلیفہ کے نام سے کی ہے۔اس کی عمر انیس سال تھی۔ انھوں نے بتایا ہے کہ اسرائیلی فوجیوں نے کیمپ پر دھاوا بولا تھا جس کے بعد ان کی وہاں فلسطینی نوجوانوں سے جھڑپ شروع ہوگئی تھی۔

اسرائیلی فوجیوں نے فلسطینیوں کو منتشر کرنے کے لیے ان پر فائرنگ کی ہے۔ اسرائیلی فوج کی ایک خاتون ترجمان نے دعویٰ کیا ہے کہ فوجیوں پر کیمپ میں داخل ہونے کے بعد دھماکا خیز مواد سے حملہ کیا گیا تھا۔فوجیوں نے خطرے کے پیش نظر تشدد کے محرکین پر فائرنگ کردی تھی لیکن واقعے میں کوئی اسرائیلی فوجی زخمی نہیں ہوا ہے۔

مقبوضہ فلسطینی علاقوں میں حالیہ دنوں میں ایک مرتبہ پھر تشدد کے واقعات میں اضافہ ہوگیا ہے اور اسرائیلی فوجی مزعومہ خطرے کے پیش نظر فلسطینیوں کو گولیاں مار موت کی نیند سلا رہے ہیں۔

واضح رہے کہ اکتوبر 2015ء سے اب تک اسرائیلی فورسز کی مقبوضہ بیت المقدس ، غرب اردن اور غزہ کی پٹی میں سفاکانہ کریک ڈاؤن کارروائیوں، فائرنگ اور حملوں میں 252 فلسطینی شہید ہوچکے ہیں۔ان میں سے 150 کے بارے میں اسرائیلی فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ وہ مبینہ طور پر حملہ آور تھے۔

اس عرصے کے دوران میں فلسطینیوں کے مبینہ چاقو حملوں ،فائرنگ یا اپنی گاڑیوں کو راہ گیروں پر چڑھانے کے واقعات میں 40 اسرائیلی ، دو امریکی ،ایک اردنی،ایک سوڈانی اور ایک ایریٹرین شہری ہلاک اور متعدد زخمی ہوئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں