.

امارات: ایرانی سفارت خانے کا ناظم الامور طلب، احتجاجی یادداشت حوالے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحد عرب امارات نے جمعرات کے روز ابوظبی میں ایرانی سفارت خانے کے ناظم الامور کو طلب کر کے ایران کی جانب سے حوثی ملیشیاؤں کو ہتھیاروں کی فراہمی پر احتجاج کیا۔

سرکاری نیوز ایجنسی "وام" کے مطابق امور خارجہ اور قانونی امور کے لیے بین الاقوامی تعاون کے اماراتی نائب وزیر عبدالرحيم العوضی نے ایرانی ناظم الامور کو طلب کر کے احتجاجی یادداشت حوالے کی۔ یادداشت میں کہا گیا ہے کہ ایران کا یمن میں آئینی حکومت کے خلاف بغاوت کرنے والی ملیشیاؤں کو غیر قانونی شکل میں ہتھیاروں کا فراہم کرنا.. سلامتی کونسل کی قراردادوں کی صریسح خلاف ورزی ہے جو اس عمل پر پابندی عائد کرتی ہیں۔

العوضی کے مطابق اس سلسلے میں یمن کے متعلق سلامتی کونسل کی قرارداد 2216 بالکل واضح ہے۔ ایرانی اسلحے کے ضمن میں ڈرون طیاروں کی بھی فراہمی کی گئی ہے جس کو کچھ عرصہ قبل عرب اتحادی افواج نے نشانہ بنایا اور یہ متعلقہ بین الاقوامی قراردادوں کی کھلی خلاف ورزی ہے۔